وہ غبارے جن پر آئی لکھا ہوا تھا ۔ہندوستان کیلئے ڈراؤنا خواب بن گیۓ۔آئی ایس آئی کے خوف سے بھارت کی چیخیں امریکہ و اسرائیل جا پہنچیں۔

وہ غبارے جن پر آئی لکھا ہوا تھا ۔ہندوستان کیلئے ڈراؤنا خواب بن گیۓ۔آئی ایس آئی کے خوف سے بھارت کی چیخیں امریکہ و اسرائیل جا پہنچیں۔

وہ غبارے جن پر آئی لکھا ہوا تھا ۔ہندوستان کیلئے ڈراؤنا خواب بن گیۓ۔آئی ایس ... 31 مئی 2018 (20:18) 8:18 PM, May 31, 2018

بھارتی میڈیا کو کسی پل بھی چین نہیں پاکستانی فوج اور آئی ایس آئی پر الزامات کی بوچھاڑ کا کوئی موقعہ بھی ہاتھ سے جانے نہیں دیتا . بھارتی میڈیا ان دنوں اس بات پر روتا نظر آرہا ہے کہ پاکستانی آئی ایس آئی بھارت کے خلاف بم دھماکوں میں پالتو جانوروں کا استعمال کر سکتی ہے . آئی ایس آئی اب بھارت کے خلاف کُتا پالیسی پر عمل درآمد ہے . بھارتی میڈیا کے مطابق عوام کو لباس میں نظر آنے والے کُتوں سے دُور رہنے کی اپیل کی گئی ہے .اس سے پہلے وسوسوں میں پلتے انڈیا نے ایک کبوتر کو پاکستانی جاسوس قرار دےکر اُس کے جسم کے بے شُمار معائنے کئے اور کہا گیا کہ کبوتر کے پیٹ میں دھماکے دار بم فٹ کیا گیا تھا جو بڑے پیمانے پر تباہی پھیلا سکتا ہے .بھارتی جنرل کا کہنا تھا کہ ہم نے تقریباّ دو ہزار تیز رفتار اور تیز دماغ کبوتر پکڑے ہیں . ہمارے کبوتروں سے ان کا دماغ اور رفتار دونوں بُہت تیز ہیں .پاکستانی جاسوس کبوتر بغیر تھکے 14 گھنٹے اُڑ سکتے ہیں جبکہ ہمارے بھارتی کبوتروں میں اتنی صلاحیت نہیں ہے.اِن کبوتروں کو سخت دھوپ میں ٹریننگ دی گئی ہے تاکہ ان پر کسی اور موسم کا کوئی اثر نہ ہو اور انھیں خاص قسم کہ ادویات دی جاتی رہی ہیں یہ کبوتر ایک موقعے کی تلاش میں رہتے ہیں کہ جہاں زیادہ بھیڑ نظر آئے وہاں دھماکہ کر دیں.

ایک موقعہ پر بھارتی میڈیا نے یہ خبر چلائی تھی کہ پاکستانی آئی ایس آئی اور پاک آرمی کو فولادی روبوٹ جواب دینگے یہ روبوٹ پاکستانیوں کو بارڈر پر چُن چُن کر ماریں گے . مگر کُچھ ہی دنوں کے بعد بھارتی میڈیا نے دوبارہ رونا دھونا شروع کر دیا کہ کہ انڈین بارڈر سے غبارے موصول ہوئے ہیں جن پر انڈیا کے خلاف دھمکیاں واضح لکھی گئی ہیں .غباروں سے خوفزدہ انڈیا آرمی نے ان سے بھی شہریوں دور رہنے کی تاکید کر دی ہے .پیلے رنگ کے غُباروں پر نہ صرف پاکستان لکھا ہوا ہے بلکہ واضح الفاظ میں " آئی " بھی لکھا ہوا ہے جس ک مطلب ہے کہ غُبارے آئی ایس آئی کی جانب سے انڈٰیا کو ڈرانے کیلئے بھیجے گئے ہیں . یہ غُبارے بڑی تعداد میں ہیں جن پر" آئی لو یو پاکستان" لکھا ہوا ہے.

متعلقہ خبریں