نواز شریف سے ہاتھ ملانے والا شخص کون تھا - سٹیج پر نواز شریف کو کیا یاد دلانے گیا تھا کہ خود یادگار بن گیا۔

نواز شریف سے ہاتھ ملانے والا شخص کون تھا - سٹیج پر نواز شریف کو کیا یاد دلانے گیا تھا کہ خود یادگار بن گیا۔

نواز شریف سے ہاتھ ملانے والا شخص کون تھا - سٹیج پر نواز شریف کو کیا یاد دلانے ... 30 مئی 2018 (15:17) 3:17 PM, May 30, 2018

لاہور(ویب ڈیسک) نواز شریف سے ہاتھ ملانے پر وہاں موجود اہلکاروں نے ایک شخص بدترین تشدد کا نشانہ بنایا تھا - اس شخص کا نام ایوب بھٹہ ہے - اور یہ مسلم لیگ ن کا ایک بہت پرانا کارکن ہے - ایوب بھٹہ نے نواز شریف سے ہاتھ ملانے کی وجہ یہ بتائی ہے کہ نواز شریف نے 2008 میں انہیں گھر دینے کا وعدہ کیا تھا -وہ ہی سٹیج پر ان کو یاد دلانے گیا تھا -اور پھر پولیس نے ان کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا تھا - ایوب بھٹہ کا کہنا ہے کہ :"یہ لاتیں مکے ٹھڈے جو بھی مجھے پولیس والوں سے ملے ہیں یہ نواز شریف کی طرف سے میرے لیے پھول ہیں -میں ان سے اپنی ریائش گاہ کا مسئلہ بیان کرنے گیا تھا اور ان کو ان کا وعدہ یاد دلانے گیا تھا جو اب حل ہو گیا ہے-میری غلطی ہے -مجھے اسطرح نہیں جانا چاہیے تھا -"

یاد رہیکہ لاہور میں یوم تکبیر پرمسلم لیگ نون کا کنونشن جاری تھا ۔اسٹیج پرنوازشریف کےہمراہ ان کی بیٹی مریم نوازبھی موجودتھیں۔ اس دوران مریم نوازاور نوازشریف گفتگومیں مصروف تھے کہ اچانک ایک کارکن نے اسٹیج پرآکرنوازشریف سے ہاتھ ملانےکی کوشش کی ۔ تاہم سیکورٹی اہلکاروں نے اس شخص کو فوری طورپر دبوچ لیا اور درگت بناڈالی تھی۔مریم نوازاس صورتحال ہر ہکابکا رہ گئیں۔ نوازشریف بھی سیکورٹی اہلکاروں کو روکتےرہ گئے۔ کارکن کو سیکورٹی اہلکار کئی مکےاور گھونسےمارتےرہے۔ تاہم سعد رفیق نے اسٹیج سے اٹھ کر مداخلت کی اور کارکن کومزید پٹنےسے بچایا۔اس کےبعد نوازشریف نے کارکن کوقریب بلایا اورگلےلگایا اور معاملہ رفع دفع ہوگیا

متعلقہ خبریں