ایران میں مشہور اداکار کا جنازہ میدان جنگ بن گیا۔

ایران میں مشہور اداکار کا جنازہ میدان جنگ بن گیا۔

ایران میں مشہور اداکار کا جنازہ میدان جنگ بن گیا۔ 30 مئی 2018 (12:38) 12:38 PM, May 30, 2018

تہران : ایران کے دارالحکومت تہران میں سکیورٹی فورسز نے مشہور اداکار اور ہدایت کار ناصر ملک مطیعی کے کا جنازہ اس وقت میدان جنگ بن گیا جب جنازہ میں موجو د لوگ ایرانی حکومت کی پالیسیوں کیخلاف احتجاج کرنے لگے ۔ اس دوران عوام نے ایرانی سپریم لیڈر علی خامنہ ای کے خلاف نعرے بازی بھی کی اور انہیں "آمر" قرار دیا۔

سوشل میڈیا پروائرل وڈیوز میں دیکھا جا سکتا ہیکہ سکیورٹی فورسزاور مظاہرین کی آپس میں جھڑپیں ہو رہی ہیں مظاہرین "آمر مردہ باد" کے نعرے لگارہے ہیں۔ یاد رہے کہ ایرانی نظام نے 1979ء کے انقلاب کے بعد سے معروف اداکار ملک مطیعی پر پابندی عائد کر دی تھی جو شاہ ایران کے دور میں اپنی فلموں کے باعث مشہور تھے۔

ملک مطیعی کو ایرانی دارالحکومت کے "بہشت زہراء" قبرستان میں فن کاروں کے حصّے میں دفن کیا گیا ۔

سکیورٹی فورسز نے جنازے کے قافلے پر دھاوا بول کر عوام کو منتشر کرنے کےلئے آنسو گیس کے گولے استعمال کیے۔ وڈیو کلپوں میں مظاہرین سکیورٹی فورسز کے خلاف نعرے بازی کرتے دکھائی دے رہے ہیں جب کہ موٹر سائیکلوں پر سوار سکیورٹی اہل کار کئی نوجوانوں پر لاٹھی چارج کرنے اور ان کو منتشر کرنے کے لیے تعاقب کرتے نظر آ رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں