پاکستان کے مشہور کا لج میں لڑکیوں کے ساتھ کیا ہوتا رہا ۔ایک اسلامی ملک کے کالج میں ھونیوالی بے شرمی کو طالبات نے بے نقاب کر دیا۔

پاکستان کے مشہور کا لج میں لڑکیوں کے ساتھ کیا ہوتا رہا ۔ایک اسلامی ملک کے کالج میں ھونیوالی بے شرمی کو طالبات نے بے نقاب کر دیا۔

پاکستان کے مشہور کا لج میں لڑکیوں کے ساتھ کیا ہوتا رہا ۔ایک اسلامی ملک کے ... 30 مئی 2018 (12:18) 12:18 PM, May 30, 2018

اسلام آباد(ویب ڈیسک)بحریہ کالج میں تعنیات وفاقی بورڈ کے ایگزام انسٹکرکٹرکیخلاف طالبات کی جنسی طور پر ہراساں کرنے کی شکایت سامنے آئی ہے۔

صبا علی نامی لڑکی اس واقعے کی متاثرین میں سے شامل ہیں انہوں نے سوشل میڈیاپر اپنے اور اپنے دوستوں کیخلاف ھونیوالے ظلم کیخلاف آواز اٹھائی ہے۔صبا نے اپنی پوسٹ میں دعوی کیا ہے کہ ایگزام انسٹکرکٹر 'بہت سخت' تھا اور طلباء کے اساتذ ہ کو ہال میں داخل ہونے کی اجازت نہیں تھی جہاں امتحان ہو رہا تھا . آخر میں اسکول کے پرنسپل نے استاد کو ہال میں داخل ہونے کی اجازت دی ، لیکن وہ بے بس نظر آئےاور سادات بشیر نے حال میں موجود تقریبا 80 طالبات پر نازیبا جملے کسے۔

صبا کا کہنا تھا کہ سادات بشیر نے صبا کو بھی ہراساں کیا اور نازیبا جملے کسے جو اسکے لیے ناقابل برداشت تھے۔طالب علموں نے اساتذہ کو مدد کے لئے دیکھا، لیکن وہ عزت کی خاطر خاموش رہے ، اساتذہ نے طلباء سے کہا کہ وہ بھی احتجاج نہ کریںکیونکہ ایگزامنر انکے مارکس کا ٹے گا۔

ایگزامنرانے طالبات کو آواز اٹھانے کی پاداش میں مارکس کاٹنے کی دھمکی دی۔

صبا کی ھمت کے بعد، کئی دوسرے طالب علم بھی آگے آئے اور اس سے اپنی آواز ملائی۔

متعلقہ خبریں