میں نے کُرتہ شلوار اورٹوپی پہن رکھی تھی وہاں پر شوبز کے بڑے بڑے اسٹارز آئےہوئے تھے تو میرے دل میں خیال آیا کہ۔۔۔۔۔۔۔وہاں موجود رپریزینٹر (جو بی بی سی کا نمبر ون ہے ) شراب پی رہا تھا اور میری طرف شراب کی بوتل لہرا رہا تھا۔معروف کرکٹرمشتاق کے زندگی میں آنے والےانقلاب کی دلچسپ کہانی

میں نے کُرتہ شلوار اورٹوپی پہن رکھی تھی وہاں پر شوبز کے بڑے بڑے اسٹارز آئےہوئے تھے تو میرے دل میں خیال آیا کہ۔۔۔۔۔۔۔وہاں موجود رپریزینٹر (جو بی بی سی کا نمبر ون ہے ) شراب پی رہا تھا اور میری طرف شراب کی بوتل لہرا رہا تھا۔معروف کرکٹرمشتاق کے زندگی میں آنے والےانقلاب کی دلچسپ کہانی

میں نے کُرتہ شلوار اورٹوپی پہن رکھی تھی وہاں پر شوبز کے بڑے بڑے اسٹارز ... 29 مئی 2018 (17:14) 5:14 PM, May 29, 2018

معروف کرکٹر مشتاق احمد کا اپنی زندگی میں اسلام آنے کے متعلق کہنا تھا کہ" جب میں ویسٹ انڈیز گیا تو وہاں ظُہر کی نماز کا وقت ہو گیا . میرے دل میں یہ خیال آیا یہاں اتنی بڑی بڑی شخصیات ہیں میں جب یہاں نماز پڑھوں گا تو وہ کیا سوچیں گے تو میں نے سوچا کہ ظُہر اور عصر دونوں اکٹھی جا کر کسی اکیلے کمرے میں پڑھ لوں گا .مگر میرے دل میں اس کو بہت بُرا محسوس کیا اور سوچنے لگا کہ یہاں کون لیکر آیا ہے کون یہاں سے نکالے گا کون رزق دے رہا ہے یہاں تو میرے دل سے جواب آیا اللہ تعالٰی . دو منٹ بعد میں کمرے میں گیا اور میں نے ظُہر کی نُماز ادا کی تین دن بعد وہ لوگ کمری خالی کرنے لگ گئے تھی کہ مشتاق کی نُماز کا ٹائم ہو گیا ہے . جب وہاں ویسٹ انڈیز کا ایک کھلاڑی آؤٹ ہو کر آیا تو اُس نے دیکھے بناِ غُصے میں آ کر گالیاں دینی شروع کر دی . جب میں نُماز پڑھ چُکا تو وہ میرے پاس آیا اور مُعافی مانگی کہ جب تُم نُماز پڑھ رہے تھے تو میں آؤٹ ہو کر آیا تھا مجھے معاف کر دو میں اپنے روئیے کی معافی مانگتا ہوں "

مُجھے ایک تقریب میں پاکستانی کوچ ہونے کی حیثیت سے بُلایا گیا اور میں نے کُرتہ شلوار اورٹوپی پہن رکھی تھی وہاں پر شوبز کے بڑے بڑے اسٹارز آئےہوئے تھے تو میرے دل میں خیال آیا کہ میں کس حُلیے میں آ گیا ہوں وہاں موجود ہر شخص مجھے دیکھ رہا تھا . وہاں موجود رپریزینٹر (جو بی بی سی کا نمبر ون ہے ) شراب پی رہا تھا اور میری طرف شراب کی بوتل لہرا رہا تھا میں نے اپنے سوال کا جواب دیا ور چلا گیا . ایک دن بعد آیا اور مجھ سے معافی مانگی اور کہا کہ اپنے روئیے کی مُعافی مانگتا ہوں تم لوگ مسلمان ہو شراب نہیں پیتے . " جب ایک دن میں اور دوسری ٹیم کا کوچ ساتھی میرے ساتھ جب کھانا کھا کر ہوٹل سے نکلا تو ایک ایشین نے اسے کہا کہ آج آپ کی ٹیم جیتے گی تو بےساختہ اُس کے مُنہ سے نکلا " انشااللہ ". ایک کافر کا اللہ پر اتنا یقین ہے.

ساری بات کا خلاصہ یہ ہے کہ اللہ کے دین اور اُس کے نبی کی سُنت پر عمل کر کے انسان دُنیا و آخرت کی فلاح کیساتھ ساتھ دلی سکون بھی پاتا ہے ."