ناصر الملک جج کے لحاظ سے تو ٹھیک ہیں لیکن انہیں بین الاقوامی معاملات میں ۔۔۔۔۔جلیل عباس جیلانی پرائمنسٹر کے طور پر زیادہ ٹھیک رہتے ۔۔۔۔۔۔معروف صحافی کا جلیل عباس کے حق میں بڑا دعوی۔

ناصر الملک جج کے لحاظ سے تو ٹھیک ہیں لیکن انہیں بین الاقوامی معاملات میں ۔۔۔۔۔جلیل عباس جیلانی پرائمنسٹر کے طور پر زیادہ ٹھیک رہتے ۔۔۔۔۔۔معروف صحافی کا جلیل عباس کے حق میں بڑا دعوی۔

ناصر الملک جج کے لحاظ سے تو ٹھیک ہیں لیکن انہیں بین الاقوامی معاملات میں ... 29 مئی 2018 (16:55) 4:55 PM, May 29, 2018

معروف تجزیہ نگار محمد مالک کا جسٹس ریٹائر ناصرالملک کے وزیر اعظم منتخب ہونے کے بارے میں کہنا ہے کہ :"میرا خیال ہے کہ یہ اچھے وزیر اعظم ہوں گے - تمام سیاسی پارٹیاں بھی اس پر متفق ہوں گی کیونکہ ان کے خلاف کچھ نہیں ہے - میرے خیال میں اس بات پر نام نامزد نہیں کیا گیا کہ کس کے سب سے زیادہ اچھے کام ہیں بلکہ یہ نام اس بات پر نامزد کیے گئے ہیں کہ کس کے خلاف زیادہ مواد نہیں ہے - جلیل عباس جیلانی کو اس لیے نہیں نامزد کیا گیا گیا کہ ان کی ہمارے ایک سابقہ پرائمنسٹر سے دور پار کی رشتہ داری بھی ہے -لیکن میرا خیال ہے کہ جلیل صاحب پرائمنسٹر کے طور پر زیادہ ٹھیک رہتے کیونکہ جو سفارتی بحران ہیں ان پر پورا اترتے ہیں ناصر الملک جج کے لحاظ سے تو ٹھیک ہیں لیکن انہیں بین الاقوامی معاملات میں ان کا کوئی تجربہ نہیں ہے - "

یاد رہے کہ گزشتہ روزقومی اسمبلی میں حزب اختلاف کے رہنما خورشید شاہ اور وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ایک پریس کانفرنس میں اعلان کیاتھا کہ پاکستان کے سابق چیف جسٹس ناصر الملک ملک کے نگران وزیراعظم ہوں گے۔تفصیلات کیمطابق یہ فیصلہ اس وقت آیا تھا جب دونوں رہنماؤں نے نگران وزیر وزیراعظم کے نام کو چننے کیلئے آخری ملاقات تھی۔ یہ ملاقات دونوں رہنماوں کے درمیان چھٹی تھی، جو ابھی تک اتفاق رائے میں ناکام رہے تھے۔

متعلقہ خبریں