عدلیہ مخالف ریلی نکالنے وال مسلم لیگی ایم این اے سمیت دیگر 4 ملزمان عدلیہ کی گرفت میں

عدلیہ مخالف ریلی نکالنے وال مسلم لیگی ایم این اے سمیت دیگر 4 ملزمان عدلیہ کی گرفت میں

عدلیہ مخالف ریلی نکالنے وال مسلم لیگی ایم این اے سمیت دیگر 4 ملزمان عدلیہ کی ... 29 جون 2018 (12:31) 12:31 PM, June 29, 2018

لاہور ہائیکورٹ نے عدلیہ مخالف ریلی نکالنے پر مسلم لیگ ( ن ) کے سابق ایم این اے شیخ وسیم اختر سمیت دیگر 4 ملزمان کو ایک، ایک ماہ قید اور فی کس ایک لاکھ روپے جرمانے کی سزا سُنا دی۔

ذرائع کیمطابق قصور سے ن لیگ کے سابق ایم این اے شیخ وسیم سمیت 3 رہنماؤں کو توہین عدالت کا مرتکب قرار دیتے ہوئے ایک ایک ماہ قید اور ایک لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنا دی جبکہ دو ملزمان کو بری کردیا گیا۔

لاہور ہائیکورٹ میں جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے قصور میں عدلیہ مخالف ریلی نکالنے والے ملزمان کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی ۔عدالت نے کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے مسلم لیگ ( ن ) کے سابق ممبر قومی اسمبلی شیخ وسیم اختر اور ان کے 3 ساتھیوں کو ایک ایک ماہ قید کی سزا سناتے ہوئے فی کس ایک لاکھ روپے جرمانہ ادا کرنے کا بھی حکم دیا ہے،فیصلہ آتے ہی سزایافتہ نون لیگی رہنماؤں کو پولیس نے احاطہ عدالت سے گرفتار کرلیا ہے۔

۔

ضرور پڑھیں: عمران خان آج تک اپنی ماں کا کینسر بیچ رہا ہے،لیگی رہنما کا عمران خان پر شدید ذاتی حملہ

ضرور پڑھیں: الیکشن میں دھاندلی کی نئی تاریخ رقم کی جا رہی ہے، الیکشن میں دھاندلی نہ رکی تو نتائج ہولناک ہوں گے، پچھلے کئی مہینوں کا ریکارڈ اٹھا کر دیکھ لیں، صرف میں اورمیرے ساتھی۔۔۔۔نواز شریف سینہ ٹھوک کر آ گئے سنگین الزام لگا دئیے

عدالت نے ( ن ) لیگ کے سابق ایم پی اے نعیم صفدر اور حاجی ایاز کو بری کردیا۔

عدالت کی جانب سے سزا سنائے جانے کے بعد پولیس نے ملزمان کو کمرہ عدالت سے ہی گرفتار کر لیا۔ عدالت نے دو ملزمان ناصر خان اور جمیل خان کی جانب سے رحم کی اپیل کرنے پر انہیں معاف کر دیا۔ دونوں ملزمان کو معاف کرنے کی ہدایت چیف جسٹس پاکستان نے دی تھی۔

اس ریلی کی قیادت مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی وسیم اختر، رکن پنجاب اسمبلی نعیم صفدر اور ناصر محمود نے کی ۔

واضح رہے کہ قصور میں 13 اپریل کو عدلیہ مخالف ریلی نکالی گئی تھی جس کے خلاف 30 اپریل کو لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی گئی تھی۔

متعلقہ خبریں