کراچی میں ذہنی مریضہ نے بڑا نقصان کر دیا۔اپنے ہی گھر کے آٹھ افراد موت کی نیند سلا دئے۔

کراچی میں ذہنی مریضہ نے بڑا نقصان کر دیا۔اپنے ہی گھر کے آٹھ افراد موت کی نیند سلا دئے۔

کراچی میں ذہنی مریضہ نے بڑا نقصان کر دیا۔اپنے ہی گھر کے آٹھ افراد موت کی نیند ... 28 مئی 2018 (12:31) 12:31 PM, May 28, 2018

کراچی (ویب ڈیسک) کراچی میں بلدیہ ٹاؤن کے ملنگ گوٹھ کے علاقے میں اتوار کی رات کو بچوں سمیت آٹھ افراد جھل کر جاں بحق ہوگئے.

تفصیلات کیمطابق کراچی کے علاقے بلدیہ ٹاؤن ملنگ گوٹھ میں ذہنی مریضہ گلزار ں بی بی نے گھر کو آگ لگا دی۔ آتشزدگی کے باعث گلزارہ بی بی سمیت 8 افراد جھلس کر جاں بحق جبکہ ایک زخمی ہو گیا۔

سیکورٹی حکام کے مطابق زخمی ہونے والے بیٹوں میں سے ایک نے پولیس کو بتایا کہ آگ حادثہ نہیں تھا بلکہ ان کی ماں نے لگائی۔

سجاد نے ایک ویڈیو انٹرویو میں پولیس کو بتایا کہ اس کی ماں نے ذہنی طور پر تندرست نہیں تھی اور گزشتہ دو سالوں سے علاجچل رہا تھا. انہوں نے کہا کہ جب گھر آگ گی تو وہ سو ر ہے تھے۔

آگ ایسی لگی کے پورا گھر لپیٹ میں لے لیا۔ 8 افراد جن میں 25 سالہ نائلہ، 15 سالہ نازیہ، 7 سالہ رقیہ، 8 سالہ ریحان، 22 سالہ ظفر، طیب، اقصی اور خود گلزارہ بی بی جان سے گئے جبکہ ایک بیٹا ساجد ہسپتال میں زندگی اور موت کی جنگ لڑ رہا ہے۔

گھر میں آگ پھیلی تو اہل محلہ نے اپنی مدد آپ کے تحت اس پر قابو پانے کی کوشش کی ۔ پولیس کے مطابق شوہر علی بخش کا کہنا ہے کہ کمرے سے باہر آتے ہی گلزارا بی بی نے کمرے اور کھڑکیاں اندر سے بند کر لی تھیں۔ پولیس نے بیانات قلمبند کرنے کا سلسلہ شروع کر دیا ہے۔

سیکورٹی اہلکار نے جائے حادثہ کا معائنہ کیا اور اس بات کی تصدیق کی کہ ماں کی طرف سے آگ لگائی گئی اور نہ کہ حادثے سے.

متعلقہ خبریں