عمر اکمل کے میچ فکسنگ سے متعلق اعترافی بیان نے انہیں پھنسا دیا

عمر اکمل کے میچ فکسنگ سے متعلق اعترافی بیان نے انہیں پھنسا دیا

عمر اکمل کے میچ فکسنگ سے متعلق اعترافی بیان نے انہیں پھنسا دیا 27 جون 2018 (17:47) 5:47 PM, June 27, 2018

پاکستانی کرکٹر عمر اکمل کی جانب سے ٹیم کے کوچ مکی آرتھر کے خلاف الزام تراشی کو ابھی کچھ ہی ماہ گزرے ہیں کہ عمراکمل ایک مرتبہ پھر میچ فکسنگ کی پیشکش سے متعلق بیان دے کر پھنس گئے ہیں۔

عمر اکمل نے گزشتہ ہفتے ایک انٹرویو میں اس بات کا اعتراف کیا تھا کہ انہیں 2015ء کے ورلڈ کپ میں میچ فکس کرنے کی پیشکش ہوئی تھی۔

ان کے اس بیان پر پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کا اینٹی کرپشن یونٹ حرکت میں آگیا اور پی سی بی نے اس بیان کا فوری نوٹس لیتے ہوئے عمر اکمل کو بدھ کو طلب کیا ہے۔

عمراکمل کے اس معاملے میں پھنسے کی اہم وجہ آئی سی سی کا ضابطۂ اخلاق ہے جس کے تحت کھلاڑیوں کو ہونے والی کسی بھی پیشکش کو فوری طور پر رپورٹ کرنا ہوتا ہے جبکہ عمر اکمل نے اس حوالے سے کسی کو بھی بروقت مطلع نہیں کیا تھا۔

ضابطۂ اخلاق کے تحت غلط بیانی بھی سنگین جرم شمار ہوتی ہے جس کی سزا کم از کم چھ ماہ ہے۔

پاکستانی میڈیا کے مطابق اس سے قبل کہ پی سی بی کی جانب سے جاری شوکاز نوٹس کی وضاحت کے لیے عمر اکمل بدھ کو حاضر ہوتے، وہ پیر کو خود ہی اچانک ہی پی سی بی ہیڈ کوارٹر پہنچ گئے جہاں انہیں اینٹی کرپشن یونٹ کےسوالات کا سامنا کرنا پڑا۔

اطلاعات کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن یونٹ کے سربراہ کرنل (ر) اعظم نے عمر اکمل سے ڈیڑھ گھنٹے تک پوچھ گچھ کی۔ اس پوچھ گچھ کی تفصیلات کا اعلان جلد متوقع ہے۔

متعلقہ خبریں