پاکستانی فوجی یہ لباس پہن کر آتے ہیں اور ھمارے فوجیوں کو مار کر چلے جاتے ہیں۔انڈین میڈیا کا نیا جھوٹا رونا شروع

پاکستانی فوجی یہ لباس پہن کر آتے ہیں اور ھمارے فوجیوں کو مار کر چلے جاتے ہیں۔انڈین میڈیا کا نیا جھوٹا رونا شروع

پاکستانی فوجی یہ لباس پہن کر آتے ہیں اور ھمارے فوجیوں کو مار کر چلے جاتے ... 26 مئی 2018 (14:35) 2:35 PM, May 26, 2018

انڈین میڈیا اپنی فوج کی ناکامیوں اور پسپائی کو پاکستان آرمی کی چال قرار دینے اور الزامات کی بوچھاڑ کرنے سے باز نہ آیا بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ پاکستانی رینجرز تھرمل سیوٹ پہن کر اُن کے سپاہیوں کو مار رہی ہے اور بھارتی فوجی نوجوانوں کو بڑی تعداد میں نشانہ بنا رہی ہے . پاکستانی رینجرزاب نئی قسم کے کپڑوں کا سہارا لے رہے ہیں اور نئی چال چل کر بھارتی فوجیوں کو نشانہ بنا ہے ہیں . بھارتی میڈیا کا کہنا تھا کہ یہ تھرمل سیوٹ کیمو فلاس کے بنے ہوئے ہیں اور اس کی خاصیت یہ ہوتی ہے کہ یہ کپڑے پہنے ہوا شخص ہینڈ امیج تھرمل میں نظر نہیں آتا اور اب بھارتیوں کیلئے سرحد کی نگرانی کرنا ناممکن نظر آتا ہے۔

یاد رہے کہ بھارتی میڈیا جھوٹ میں اس قدر مصروف ہیکہ اسے پاکستان کی طرف سے آتا کبوتر بھی جاسوس نظر آتا ہے۔

بھارت کے تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ پہلے ہم اس بات سے اتفاق نہیں کرتے تھے لیکن جب سے بھارتی فوجیوں کی بارڈر پر ہلاکتوں کی تعداد زیادہ ہوئی ہے اب یہ پاک آرمی اور رینجرز کی چال ہی لگتی ہے . پاکستان ایک مجاہدین کی فوج تیار کر رہا ہے جو بھارتی فوجیوں کو مارنے کیلئے بنائی گئی ہے . پاکستانی خُفیہ ایجنسی آئی ایس آئی اور پاک آرمی انڈیا پر خطر ناک حملے کرنے کیلئے مجاہدین فوج استمعمال سکتی ہے . بھارتی خُفیہ معلومات کے مُطابق پاکستان کی سرحد کے پار اب نئے مجاہدین کی بھرتی اور تعینات ہو رہی ہے .پہلے اس ایجنسی کا ہیڈ آفس لاہور میں ہوتا تھا مگر اب یہ آفس کشمیر میں مُنتقل کر دیا گیا ہے . انڈین میڈیا کا مزید کہنا تھا کہ 1999 میں پاکستان نے اپنی مجاہدین فورس کو کشمیر بھیجا تھا اور اُنھوں گارگل میں داخل ہو کر بڑی تعداد میں بھارتی فوجیوں کو مارا تھا اور پاکستان کی یہ مجاہدین فورس بھارتی فوج پر مصیبت بن کر ٹوٹی تھی .۔

ہمارے پیارے ملک پاکستان کیخلاف انڈیا کا پروپگنڈا دن بدن بڑھ رہا ہے لیکن جھوٹ کے پاؤں

نہیں ھوتے۔

متعلقہ خبریں