دانیال عزیز نے ایوان میں فاٹا کے موضوع پر بات کرنے کے بجائے اپنا دکھڑا سنانا شروع کر دیا۔ عمران کو دوبارہ وہ لقب دے ڈالا جس پر تھپڑ پڑا تھا

دانیال عزیز نے ایوان میں فاٹا کے موضوع پر بات کرنے کے بجائے اپنا دکھڑا سنانا شروع کر دیا۔ عمران کو دوبارہ وہ لقب دے ڈالا جس پر تھپڑ پڑا تھا

دانیال عزیز نے ایوان میں فاٹا کے موضوع پر بات کرنے کے بجائے اپنا دکھڑا سنانا ... 26 مئی 2018 (12:10) 12:10 PM, May 26, 2018

دانیال عزیز نے پارلیمنٹ میں نعیم الحق سے پڑھنے والے تھپڑ کا ذکر چھیڑ دیا اور کہا کہ :"بلاوجہ میرے ساتھ ایک زیادتی ہوئی ,اورمجھے انتہائی افسوس ہوا اس بات کا کہ ان پاس اتنی شائستگی نہیں تھی اتنا ظرف نہیں تھا کہ غلطی کر کے کم از کم یہ اس کی معذرت کرتے ایک پارلیمنٹ ٹریڈیشن کو سیٹ کرتے الٹا انہوں نے میرے اوپر الزام لگانے کی کوشش کی کہ میرے کسی حرف سے انہوں نے جمو حرکت کی وہ جسٹیفائیڈ تھی -" دانیال عزیز کا کہنا تھا کہ :"جناب اسپیکر جو ڈھیٹ کا لفظ ہے وہ میں نے بالکل استعمال کیا اور میں اس پر کھڑا ہوں اس کی وجہ یہ ہے کہ اس وقت پاکستان میں صرف دو شخصیات ہیں جنہوں باقاعدہ سرکار کو لکھوا کے یہ بات تسلیم کی ہے کہ انہو نے ٹیکس چوری کی ہے" اس کےبعد اسپیکر کی خاموش ہو جانے کی درخواست کو نظر انداز کر کے ان و شخصیات کا نام بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ :" ان میں سے ایک یہاں پر موجود ہیں جو عمران خان ہیں ,انہوں نے ایم ایل ٹی سکیم میں اور دوسرا جہانگیر ترین کا نام ہے جہانگیر ترین صاحب نے پروفیشنل سٹیٹمنٹ سائن کیا ہے -انہوں نے انسائیٹڈ ٹریڈنگ پہ کروڑوں روپے واپس کیے ہیں جو انہوں نے اپنے کک اور گارڈنر کے نام سے انہوں نے کاروبار کیا تھا"-" دانیال عزیز نے خود کو بے داغ اور عمران خان کو شرم اور حیا دلاتے ہوئے کہا کہ :"اور ان کی یہ جرات کہ جو شریف لوگ ہیں پڑھے لکھے لوگ ہیں اور بے داغ ہیں ,جو اپنا ٹائم پورا کرتے ہیں ,ان کے ساتھ یہ بدمعاشی کرتے ہیں اور پھر ان کے پاس اتنی شرم اور حیا نہیں ہے کہ اس بات کی معافی مانگیں "

متعلقہ خبریں