ٹوم اور جیری میں شر ٹوم ہے یا جیری ؟ہماری زندگی میں میڈیا ٹوم اور جیری کیسے کھیل رہا ہے؟ پڑھئے روز مرہ زندگی کی اہم حقیقت

ٹوم اور جیری میں شر ٹوم ہے یا جیری ؟ہماری زندگی میں میڈیا ٹوم اور جیری کیسے کھیل رہا ہے؟ پڑھئے روز مرہ زندگی کی اہم حقیقت

ٹوم اور جیری میں شر ٹوم ہے یا جیری ؟ہماری زندگی میں میڈیا ٹوم اور جیری کیسے ... 26 مئی 2018 (03:26) 3:26 AM, May 26, 2018

دنیا کا تقریبا ہر بچہ ٹوم اور جیری کے درمیان مہم جوئی یا جانبازی کو دیکھ کرتربیت حاصل کرتا ہے، ہم میں سے ہر شخص مسکین جیری سے ہمدردی کا اظہار کرتا ہے کیونکہ وہ کسی محفوظ اور سیدھا سادہ پناہ گاہ میں معمولی کھانے کے ساتھ گزر بسر کرنا چاہتا ہے جبکہ ٹوم ہمیشہ اس کے آرام میں خلل ڈالتا ہے اس کو اپنے گھر سے بے دخل کرتا ہے۔

چوہے اور بلی کے اس کھیل کو ہم نے بچپن میں اسی نقطہ نظر سے دیکھا اور یہ سمجھا کہ جیری خیر ہے جب کہ ٹوم شر ہے، میرے خیال سے کسی بھی بچے بلکہ بڑے سے بھی پوچھیں یہی کہے گا!

مگر حقیقت یہ نہیں بلکہ ٹوم نہیں جیری شر ہے مگر میڈیا کے ذریعے انتہائی مکاری سے ہمیں خیر کو شر اور شرکو خیر بتایا جاتا ہے اور ہم سب اس کو سچ سمجھ جاتے ہیں ۔ جیری یعنی چوہا گھر میں "گھس بیٹھیا"اور بن بلایا مہمان ہے جو پنیر چراتا ہے، برتنوں کو توڑتا ہے! جبکہ ٹوم گھر کے لیے درد سر اس شریر چوہے کو بھگانے کی کوشش کرتی ہے، مگر اس کو ایسی شکل میں ہمیں دکھایا جاتا ہے کہ گویا یہ بے چارہ چوہا شریر بلی کے ساتھ پرامن طور پر رہنا چاہتا ہے اور گھر کی دیکھ بھال کرنا چاہتا ہے۔

تقریباً ہر قسط کے آخر میں چوہے کو، جو کہ گھر کا کھانا چراتا ہے، کامیاب کاروائی کرنے والا دکھایا جاتا ہے، جبکہ بلی کو ہر بار پھنسی ہوئی، ناکام دکھایا جاتا ہے۔

حالانکہ اس کا گناہ صرف گھر کی حفاظت ہے مگر ہر بار اس کو احمق اور کند ذہن دکھایا جاتا ہے جبکہ جیری کو ذہین اور برتر دکھایا جاتا ہے!!!!!!!

کچھ لوگوں کے لیے یہ چھوٹی سی بات ہوگی مگر حقیقت یہ ہے کہ میڈیا یہی کرتا ہے اہم خبر کو چھپاتا ہے یا بہت چھوٹا کر کے دکھاتا ہے وہ بھی صرف اپنے زاوئیے سے، جبکہ چھوٹی باتوں کو اس قدر بڑا کر کے پیش کرتا ہے کہ لوگ سمجھتے ہیں کہ بس دنیا یہی ہے!!