فا ٹا خیبرپختونخوا میں ضم کرنے کا بل ۔۔۔مولانا فضل الرحمن اور محمود اچکزئی کیا کریں گے۔۔کتنی تعداد چاہئے ھوگی۔اہم تفصیلات منظر عام پر

فا ٹا خیبرپختونخوا میں ضم کرنے کا بل ۔۔۔مولانا فضل الرحمن اور محمود اچکزئی کیا کریں گے۔۔کتنی تعداد چاہئے ھوگی۔اہم تفصیلات منظر عام پر

فا ٹا خیبرپختونخوا میں ضم کرنے کا بل ۔۔۔مولانا فضل الرحمن اور محمود اچکزئی ... 24 مئی 2018 (10:20) 10:20 AM, May 24, 2018

فاٹا کو خیبرپختونخوا میں ضم کرنے کا بل آج قومی اسمبلی میں پیش کیا جائے گا۔فاٹا کے صوبہ خیبرپختونخوا میں انضمام پر حکومتی اتحادی جمعیت علمائے اسلام (ف) اور پشتونخوا میپ کے سوا تمام جماعتیں انضمام پر متفق ہیں۔

آئینی بل کے مطابق پاکستان کے تمام قوانین اب فاٹا پر لاگو ہوں گے جبکہ علاقے میں صدر اور گورنر کے بجائے وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے اختیارات نافذ ہوں گے۔

بل منظور کرانے کیلئے دوسوچوبیس ارکان کی حاضری ضروری ہوگئی جس کے لئے سیاسی جماعتوں کو ٹاسک مل گیاہے۔ذرائع کے مطابق وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے قانونی امور بیرسٹر ظفر اللہ کا کہنا ہے کہ فاٹا اصلاحات کے آئینی بل پرتمام جماعتیں متفق ہوچکی ہیں جو آ قومی اسمبلی میں پیش کردیا جائے گا۔

واضح رہے کہ فاٹا اصلاحات کے آئینی مسودے کے مطابق فاٹا سے قومی اسمبلی کی 12 نشستیں اور سینیٹ کی موجودہ نشستیں اگلے 5 سال تک برقرار رہیں گی۔ایک سال میں صوبائی انتخابات ہوں گے جو الیکشن کمیشن الیکشن کرائے گا۔

فاٹا کو اگلے دس سال تک سالانہ ایک ارب روپے این ایف سی ایوارڈ کی مد میں اضافی ملیں گے۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ارکان اسمبلی سے اپیل کی ہے کہ وہ آج کے اجلاس میں زیادہ سے زیادہ تعداد میں شرکت کریں ۔

متعلقہ خبریں