اس وقت ہر جوڈیشل سسٹم کا صرف ایک ہی مقصد انصاف کرنا ہے . بُہت جلد میرے اقدامات کے ۔۔۔۔۔۔۔ چیف جسٹس

اس وقت ہر جوڈیشل سسٹم کا صرف ایک ہی مقصد انصاف کرنا ہے . بُہت جلد میرے اقدامات کے ۔۔۔۔۔۔۔ چیف جسٹس

اس وقت ہر جوڈیشل سسٹم کا صرف ایک ہی مقصد انصاف کرنا ہے . بُہت جلد میرے اقدامات ... 24 جون 2018 (22:01) 10:01 PM, June 24, 2018

لاڑکانہ میں چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثار نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم کوئی مُحتاج اور غریب لوگ نہیں ہیں کہ جن کے حقوق کی حفاظت کیلئے کوئی نہیں اُٹھتا ہے . اگر کوئی بُنیادی حُقوق کیلئے کھڑا نہیں ہوتا تو کیا عدلیہ بھی ایکشن نہ لے . چیف جسٹس آف پاکستان کا کہنا تھا کہ میں کسی جُماعت کی جو آج موجود ہیں اور جو گُزر چُکی ہیں کسی پر الزام نہیں لگا رہا مگر ایک چیز میں عوام کو بتانا چاہتا ہوں کہ جتنی تبدیلی سُپریم کورٹ اور ہائیکورٹ میں آرہی ہے وہ ایڈ مینسٹریٹو آف جوڈیشیل کی وجہ سے آ رہی ہیں. اس وقت ہر جوڈیشل سسٹم کا صرف ایک ہی مقصد انصاف کرنا ہے . بُہت جلد میرے اقدامات کے مُثبت نتائج سامنے آئیں گے .

چاروں صوبوں میں ہسپتالوں کی صورتحال بہتر ہو رہی ہے .میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ ازخُود نوٹسس میں بدنیتی شامل نہیں ہے .میرے ہر سو موٹو ایکشن میں ایک جذبہ ہوتا ہے . آزادی سے جینے کا حق بُنیادی انسانی حقوق می شامل ہے .انسانی زندگی کو بوجھ نہیں بننا چاہئیے . تعلیم کے بغیر کوئی مُلک ترقی نہیں کر سکتا ہے . سندھ کے لوگوں کو زندگی بسر کرنے کیلئے بہتر سہولتیں مُیسر نہیں ہیں سندھ کے لوگوں کی صحت کو خدشات ہیں.امیر ہانی مسلم کی رپورٹ پر عمل نہ ہوا تو یہ ایک بُری خبر ہے .عوام کو بتاؤں گا کہ اُن کے بُنیادی حقوق کیا ہیں .ہسپتالوں میں ادویات ,آلات اور کام.ی ضرورت ہے . پانی کے مُتعلق میرے اقدامات جینے کے حق کیلئے ہیں .

متعلقہ خبریں