نان آف دیم (none of them)ووٹنگ سسٹم کیا ہے ؟پڑھئے دلچسپ حقائق

نان آف دیم (none of them)ووٹنگ سسٹم کیا ہے ؟پڑھئے دلچسپ حقائق

نان آف دیم (none of them)ووٹنگ سسٹم کیا ہے ؟پڑھئے دلچسپ حقائق 24 جون 2018 (20:31) 8:31 PM, June 24, 2018

سابق سیکرٹری الیکشن کمیشن کنور دلشاد نے ماریہ میمن کے پروگرام میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ سب سے پہلے ہم نے یہ تجویز "None of them "مارچ 2009 میں اُس وقت کے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کو پیش کی تھی . جب میں نے بنگلہ دیش کا ووٹنگ سسٹم دیکھا تو میں بُہت مُتاثر ہوا تھا . اس کے بعد ہم نے یہ سسٹم پاکستان میں لانے کیلئے کافی عرصے تک جدوجہد کرتے رہے اور ہماری کوشش کامیاب ہوئی تھی . 2013 میں جب انتخابات ہو رہے تو ہماری ٹیم نے جسٹس صاحب سے مُلاقات کی تھی اورہم نے اپنے بیلٹ پیپر پر None of them لکھوایا تھا کیونکہ چیف الیکشن کے پاس اُس وقت اختیارات تھے . جب یہ بیلٹ پیپر چھپنے کیلئے گیا تو رات بارہ بجے کئی سے پُر اسرار ٹیلی فون آیا اور وہ پیپر وہاں سے ڈیلیٹ کر دیا گیا .

بنگلہ دیش اور انڈیا میں یہ سسٹم کامیابی سے چل رہا ہے .ان دونوں مُمالک میں ایک قانون ہے اس قانون میں یہ ہوتا ہے کہ None of them میں اگر 30%,35% ووٹ کاسٹ کر دئیے جاتے ہیں اور اس کا یہ نتیجہ ہوتا ہے کہ دوبارہ انتخابات ہوتے ہیں . انڈیا میں 60 لاکھ لوگوں نے دستخط کئے تھے . اس قانون کو نافذ کرنے کیلئے ہم نے سندھ ہائیکورٹ اور لاہور ہائیکورٹ میں مُقدمہ کیا ہوا ہے اور اُمید ہے کہ یہ قانون الیکشن سے پہلےنافذ ہو جائے گا . اس قانون کا فائدہ یہ ہو گا کہ ہر پولنگ اسٹیشن پر ہی آرٹیکل 62 اور 65 کا فیصلہ ہو جائے گا اور عوام کے سامنے آجائیگا کہ کس نے کتنی کرپشن کی ہوئی ہے ,کون مافیا گروپ ان سب کی سربراہی کر رہی ہے ,کس نے جائیدادیں چُھپائی ہوئی ہیں . ہر پولنگ اسٹیشن پر فیصلہ عوام کے سامنے ہو جائے گا .

متعلقہ خبریں