اپنے بچوں کو موبائیل فون سے دور رکھیں ۔ورنہ انہیں یہ نفسیا تی بیماریاں لگ سکتی ہیں۔اہم رپورٹ والدین ضرور پڑھیں۔

اپنے بچوں کو موبائیل فون سے دور رکھیں ۔ورنہ انہیں یہ نفسیا تی بیماریاں لگ سکتی ہیں۔اہم رپورٹ والدین ضرور پڑھیں۔

اپنے بچوں کو موبائیل فون سے دور رکھیں ۔ورنہ انہیں یہ نفسیا تی بیماریاں لگ ... 23 مئی 2018 (11:44) 11:44 AM, May 23, 2018

والدین کا سروے کی ضرورت نہیں ہے وہ بتائیں کہ ان کے بچے اسمارٹ فونز کے عادی ہیں. اسمارٹ فون ان دنوں ہر عمر کے بچوں کی عادت بن چکا ہے ۔جو کہ بڑی تشوشناک بات ہے۔

ایک سروے رپورٹ کیمطابق حقیقت یہ ہے کہ 59 فیصد والدین نے کہا کہ ان کے نوجوان موبائل آلات کے عادی ہیں،جو کہ حیرت انگیز نہیں تھا. تاہم، یہ حقیقت یہ ہے کہ 50 فی صد بچوں نے ان کو تسلیم کیا ہے۔

جبکہ والدین موبائیل کو بچوں کیلئے ناپسند کرتے ہیں، چونکہ موبائیل کئی بیماریوں کا مؤجب بنتا ہے۔جن میں چند بیماریاں یہ ہیں

ہمدردی کا خاتمہ چونکہ

ہمدردی، دوسرے لوگوں کے جذبات کو سمجھنے اور تعریف کرنے کی صلاحیت، یہ ایک ایسی خصوصیت ہے جو معاشرے کی اچھی طرح سے ضروری ہے. ہمدردی یہ ہے کہ لوگوں کو ایک دوسرے کی مد د کرنا، اور دوسرے لوگوں اور ان کے مال کو نقصان پہنچانے سے بچنا . جب ہمدردی کم ہو یا غائب ہوجائے تو، عام طور پر مجرمانہ رویے بڑھ جاتے ہیں۔

اسکے علاوہ جذباتی معذوری بھی اہم بیماری ہے جو سمارٹ فون کے ذریعے پھیل رہی ہے۔

زیادہ فیس بک کے استعمال اور ڈپریشن علامات کے درمیان ایک لنک بھی ہے جس میں عدم خود اعتمادی بھی شامل ہیں.