ادب دُنیا کی عہد ساز شخصیت اور تند و مزاح کے بے تاج بادشاہ مُشتاق احمد یوسفی کی نُماز جنازہ ڈیفینس کی سُلطان مسجد میں اداکر دی گئی ۔

ادب دُنیا کی عہد ساز شخصیت اور تند و مزاح کے بے تاج بادشاہ مُشتاق احمد یوسفی کی نُماز جنازہ ڈیفینس کی سُلطان مسجد میں اداکر دی گئی ۔

ادب دُنیا کی عہد ساز شخصیت اور تند و مزاح کے بے تاج بادشاہ مُشتاق احمد یوسفی ... 22 جون 2018 (20:31) 8:31 PM, June 22, 2018

ادب دُنیا کی عہد ساز شخصیت اور تند و مزاح کے بے تاج بادشاہ مُشتاق احمد یوسفی 95 برس کی عُمر میں طویل علالت کے بعد اس دُنیا رُخصت ہو گئے ہیں . ان کی نُماز جنازہ ڈیفینس کی سُلطان مسجد میں ادا کی گئی تھی . ان کے نماز جنازہ میں ادبی شخصیات انور مسعود ,افتخار عارف مئیر کراچی وسیم اختر , احمد شاہ ,خالد محمود صدیقی ,سعید غنی اور دیگر شخصیات نے شرکت کی . مُشتاق یوسفی کو ڈیفنس کے قبرستان میں ہی دفن کر دیا گیا .

مزاح نگاری میں اپنا ایک الگ مُقام رکھنے والے مُشتاق احمد یوسفی آج اس دارِ فانی سے کُوچ کر گئے ہیں .اس موقعے پر پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی کا کہنا تھا کہ پاکستان سمیت دُنیا بھر میں جہاں اُردو بولی جاتی ہے وہاں مُشتاق یوسفی جیسی شخصیت موجود نہیں .

انور مسعود کا کہنا تھا کہ اُردو مزاح کی تاریخ میں یوسفی صاحب سے بڑا نثر نگار کوئی اور نہیں .

حکومت پاکستان نے انھیں 2013 میں ستارہ امتیاز اور 2002 میں ہلالِ امتیاز سے نوازا تھا .

متعلقہ خبریں