مُتحرمہ بے نظیر کی زندگی بھی بے نظیر تھی اُن کی سیاست بھی بے نظیر تھی اُن کی قیادت بھی بے نظیر تھی اور اُن کی شہادت بھی بے نظیر تھی . بلاول بھٹو

مُتحرمہ بے نظیر کی زندگی بھی بے نظیر تھی اُن کی سیاست بھی بے نظیر تھی اُن کی قیادت بھی بے نظیر تھی اور اُن کی شہادت بھی بے نظیر تھی . بلاول بھٹو

مُتحرمہ بے نظیر کی زندگی بھی بے نظیر تھی اُن کی سیاست بھی بے نظیر تھی اُن کی ... 22 جون 2018 (20:11) 8:11 PM, June 22, 2018

پیپلز پارٹی کے سربراہ بلاول بھٹو نے مُتحرمہ بے نظیر بُھٹو کی 65 ویں سالگرہ پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مُتحرمہ بے نظیر بُھٹو نے اپنی آخری سانس تک عوام کا ساتھ نہیں چھوڑا تھا اور نہ ہی عوام نے اُن کا ساتھ چھوڑا تھا . اُن کی زندگی بھی بے نظیر تھی اُن کی سیاست بھی بے نظیر تھی اُن کی قیادت بھی بے نظیر تھی اور اُن کی شہادت بھی بے نظیر تھی . شہید مُتحرمہ بے نظیر بھٹو فرماتی تھیں کہ افراد کو ختم کیا جا سکتا ہے مگر افکار لازوال ہوتے ہیں .افکار انسانوں کے دل و دماغ میں بستے ہیں .آج پوری دُنیا گواہ ہے کہ بھٹو کو ختم کرنے والے بھٹو ازم کو ختم نہیں کر سکتے ہیں. بھٹو کے دُشمن سوچتے تھے کہ بھٹو کو ختم کرنے سے بھٹو کا نظریہ اور نسل دونوں ختم ہو جائیں گے مگر آج نسل بھی قائم ہے اور نظریہ بھی قائم ہے . وہ نظریہ کیا تھا ,وہ نظریہ یہ تھا کہ اس مُلک کے غریب اور محروم طبقات کو بااختیار بنانے کا نظریہ تھا .وہ نظریہ کسانوں اور مزدوروں کی خوشحالی کا نظریہ تھا .آج مُتحرمہ بے نظیر کی سالگرہ مناتے ہوئے بی بی شہید سے یہ وعدہ کریں کہ اس مُلک کے غریب اور مزدور عوام کا ساتھ دیں گے . مُتحرمہ بے نظیر کی شہادت کے بعد میں نے یہ کہا تھا کہ جمہوریت ہمارا انتقام ہے . آخر میں اختتام مُحسن نقوی کی ایک نظم سے کرنا چاہوں گا :

اے حسین کبریا ,سُن غریب کی دُعا

سازشوں میں گِھر گئی بتِ ارضِ ایشیا

لشکرِ یزید میں ایک ِ کربلا ,

فیصلے کی مُنتظر ایک یتیم بے خطا

ٹال سب مُصیبتیں, ہے تیرے حُضور یہ دُعا

واسطہ تجھے حسین کا, توڑ ظُلم کا غُرور

یااللہ یا رسول ,یا اللہ یا رسول

بے نظیر بے قصور ,بےنظیر بے قُصور

متعلقہ خبریں