لوگوں نےقرضے لےکرمعاف کرادیے، ایسےمظلوم بنتے ہیں جیسے ان کے پاس کھانے کو نہیں،قرضے معاف کرانے والوں نے زندگی بنا کر آخرت خراب کرلی۔چیف جسٹس

لوگوں نےقرضے لےکرمعاف کرادیے، ایسےمظلوم بنتے ہیں جیسے ان کے پاس کھانے کو نہیں،قرضے معاف کرانے والوں نے زندگی بنا کر آخرت خراب کرلی۔چیف جسٹس

لوگوں نےقرضے لےکرمعاف کرادیے، ایسےمظلوم بنتے ہیں جیسے ان کے پاس کھانے کو ... 22 جون 2018 (11:51) 11:51 AM, June 22, 2018

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کراچی میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کیخلاف کیس میں ریمارکس دیئے کہ لوگوں نےقرضے لےکرمعاف کرادیے، ایسےمظلوم بنتے ہیں جیسے ان کے پاس کھانے کو نہیں، عدالت نے کے الیکٹرک کو حلف نامہ جمع کرانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ بتایا جائے کے الیکڑک کب کیسے بجلی استعداد میں اضافہ کرے گی اور کب تک کراچی میں لوڈشیڈنگ کا خاتمہ ممکن ہوسکے گا۔ جسٹس نے کہا کہ حلف نامے کے بعد بہتری نہ آئی تو سخت کارروائی کریں گے، آخر کراچی کے عوام کب تک لوڈ شیڈنگ کے عذاب بھگتیں گے۔قرضے معاف کرانے والوں نے زندگی بنا کر آخرت خراب کرلی ، میں نہیں سپریم کورٹ چاہتی ہے یہ قوم مقروض نہ رہے، اس وقت بھی جو بچہ پیدا ہوا ایک لاکھ 17 ہزار روپے کا مقروض ہے۔

متعلقہ خبریں