طالبان کا افغان فوج پر شدید ترین حملہ،کئی ہلاک اہم جگہ قبضہ بھی کر لیا

طالبان کا افغان فوج پر شدید ترین حملہ،کئی ہلاک اہم جگہ قبضہ بھی کر لیا

طالبان کا افغان فوج پر شدید ترین حملہ،کئی ہلاک اہم جگہ قبضہ بھی کر لیا 21 جون 2018 (09:49) 9:49 AM, June 21, 2018

افغان صوبہ باد غیس میں طالبان نے حملہ کرکے سیکیورٹی فورسز کے 32اہلکار ہلاک کر ڈالے۔

ذرائع کیمطابق طالبان ایک فوجی چھانی پر بھی قابض ہونے میں بھی کامیاب ہو گئے ہیں ۔

بین الاقوامی ذرائع ابلاغ کے مطابق افغان صوبے بادغیس میں طالبان نے افغان فوج کے کم از کم تیس اہلکاروں کو ہلاک کر دیا ہے۔

صوبائی گورنر عبدالغفور ملک زئی کے مطابق آج بدھ کو صبح سویرےطالبان نے مختلف سمتوں سے دو حفاظتی چوکیوں پر حملہ کیا۔ اس کے علاوہ طالبان ایک فوجی چھاؤنی پر بھی قابض ہونے میں کامیاب ہو گئے ہیں۔

عید الفطر کے موقع پر تین روزہ فائر بندی کی مدت آج ختم ہونے کے بعد طالبان کا یہ پہلا بڑا حملہ تھا۔

یاد رہیکہ افغانستان میں جنگ بندی کے خاتمے کے آخری روز صدر اشرف غنی نے جنگ بندی میں توسیع کا اعلان کردیا تھا ۔افغان حکومت نے عیدالفطر کے موقع پر طالبان کے ساتھ جنگ بندی کا اعلان کیا تھا جب کہ طالبان کی جانب سے بھی جنگ بندی کا غیر مشروط اعلان کیا گیا تھا۔افغان میڈیا کے مطابق افغانستان میں جنگ بندی کے خاتمے کے آخری روز صدر اشرف غنی نے جنگ بندی میں توسیع کا اعلان کیا ہے۔دوسری جانب امریکا نے افغان صدر کی جنگ بندی معاہدے میں توسیع کی پیش کش کو خوش آئندہ قرار دیتے ہوئے مذاکرات میں معاونت، سہولت کاری اور شرکت پر آمادگی ظاہر کردی ہے۔امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ افغان فوجی اور طالبان کی اکٹھے نماز عید کی تصاویر دیکھی ہیں، اکٹھے نماز پڑھ سکتے ہیں تو بات چیت کیوں نہیں۔

متعلقہ خبریں