خیبر پختونخواہ میں دوہری شہریت کے حامل امیدواروں کی لمبی لائن

خیبر پختونخواہ میں دوہری شہریت کے حامل امیدواروں کی لمبی لائن

خیبر پختونخواہ میں دوہری شہریت کے حامل امیدواروں کی لمبی لائن 20 جون 2018 (15:10) 3:10 PM, June 20, 2018

پشاور سے شائع ہونے والے اردو روزنامہ آج کے مطابق دوہری شہریت کے حامل 17 امیدواروں میں 9 قومی اسمبلی جبکہ 8 امیدواروں نے صوبائی اسمبلی کی نشستوں پر الیکشن میں حصہ لینے کے لیے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔

قومی اسمبلی کی نشستوں پر دوہری شہریت کے حامل امیدواروں میں حلقہ این اے 13 سےمحمد گلفام سواتی، این اے 18 سے محمد طارق، این اے 19 سے محمد طفیل، این اے 21 سے ارسلا خان ہوتی، این اے 25 سے سراج محمد، این اے 32 سے ارشد بشیر، این اے 36 سے انعام اللہ خان اور این اے 40 سے علی بیگم خان شامل ہیں۔

قبل ازیں الیکشن کمیشن پاکستان نے عام انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کا عمل مکمل کر لیا ہے اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی ، سابق صدر پرویز مشرف ، پاکستان تحریک ِ انصاف ( پی ٹی آئی ) کے سربراہ عمران خان اور متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (ایم کیو ایم ) کے امیدوار ڈاکٹر فاروق ستار کے کاغذاتِ نامزدگی متعلقہ ریٹرننگ افسروں نے مسترد کردیے ہیں۔ وہ اب ان فیصلوں کے خلاف ایپلیٹ ٹرائبیونل کے ہاں اپیل دائر کرسکتے ہیں۔پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) کے لیڈر شاہد خاقان عباسی اور ان کے کورنگ امیدوار سردار مہتاب خان عباسی نے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے حلقہ این اے 53 سے کاغذات ِ نامزدگی جمع کرائے تھے۔اس حلقہ کے ریٹرننگ افسر محمد عدنان نے ان کے کاغذات فنی بنیاد پر مسترد کیے ہیں اور کہا ہے کہ انھوں نے اپنی دستاویزات کے ساتھ ٹیکسوں کے گوشوارے جمع نہیں کرائے تھے۔البتہ ریٹرننگ افسر نے ان کے کاغذات ِ نامزدگی کے خلاف دائر کردہ تمام اعتراضات کو مسترد کردیا تھا۔

متعلقہ خبریں