حجاج کے لیے ’سلیپنگ کیپسول‘ کی نئی سروس

حجاج کے لیے ’سلیپنگ کیپسول‘ کی نئی سروس

حجاج کے لیے ’سلیپنگ کیپسول‘ کی نئی سروس 20 اگست 2018 (12:13) 12:13 PM, August 20, 2018

سعودی عرب کی حکومت اور نجی ادارے مل کر سب اللہ کے مہمانوں کی آرام راحت اور مناسک حج کی ادائی میں ان کی معاونت میں مصروف ہیں۔ ایک فلاحی تنظیم ’ھدیۃ الحاج‘ نے حجاج کرام کے لیے ایک نئی سہولت متعارف کرائی ہے۔ تنظیم کی طرف سے حجاج اور معتمرین کے لیے 18 سے24 ’سلیپنگ کیپسول‘ موبائل کمرے تیار کرائے ہیں۔ حجاج کرام مناسک حج کی ادائی کے دوران انہیں مختصر وقت میں سستانے کے لیے استعمال کر سکتے ہیں۔

’ھدیۃ الحاج‘ کی طرف سے متعارف کرائے گئے’سلیپنگ کیپسول‘ کو ’ہوٹل گفٹ‘ قرار دیا جا رہا ہے۔ اس تنظیم کا موسمی دفتر مشاعر مقدسہ میں ہے جو حجاج اور معتمرین کو دیگر کئی سروسز بھی فراہم کرتی ہے۔ تنظیم کی سرپرستی وزارت لیبر وسماجی بہود کے ڈائریکٹر جنرل عبداللہ بن احمد آل طاوی کرتے ہیں۔ ’سلیپنگ کیپسول‘ عازمین حج کے لیے حج کے موقع پر یہ اپنی نوعیت کی ایک منفرد سہولت ہے۔’ہوٹل گفٹ‘تین مربع میٹرپر مشتمل چھوٹے چھوٹے موبائل کمرے ہیں جنہیں ایک سے دوسرے مقام پر با آسانی لے جایا جاسکتا ہے۔ شیشے، پلاسٹک اور فائبر سے تیار کردہ ان کمروں کو ’مقناطیسی چابی‘ کی مدد سے کھولا اور بند کیا جاسکتا ہے۔ ان میں ایک بستر بچھا ہوتا ہے جس کے ساتھ ایک تکیہ بھی ہے، جب کہ سلیپنگ کیپسول کی اندرونی گنجائش 2.64مربع میٹر اور اونچائی 1.2 میٹر ہے۔حجاج کرام اس میں آرام کرنے کے ساتھ کئی دوسرے اہم امور بھی انجام دے سکتے ہیں۔ اس میں موبائل فون چارج کرنے، سورج کی گرمی سے بچنے، اپنی مرضی کے مطابق درجہ حرارت سیٹ کرنے اور پسند کی روشنی کا اہتمام کرنے کی سہولت ہے۔ان سلیپنگ کیپسول کو ایک دوسرے کے ساتھ ساتھ یا ایک دوسرے کے اوپر بھی رکھا جاسکتا ہے۔ اس میں چڑھنے کے لیے سیڑھی موجود ہے جو بالائی سلیپنگ روم تک پہنچا سکتی ہے۔ ان کمروں میں ٹوائلٹ، ہاتھ منہ دھونے اور نہانے کی سہولت بھی موجود ہے۔تنظیم کے ڈائریکٹر جنرل منصور العامر نے بتایا کہ عالمی سطح پر اس طرح کے موبائل سلیپنگ روم جاپان میں تیار کیے جاتے ہیں۔ بعض دوسرے ملکوں کے شہروں میں بھی یہ سہولت موجود ہے۔ ’ھدیۃ الحاج‘ کی طرف سے پہلی بار حجاج کرام کے لیے یہ سہولت حاصل کی گئی ہے تاکہ بہت زیادہ رش کے اوقات میں عازمین کو کچھ دیر آرام کی سہولت فراہم کرنا ہے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا حجاج کرام کو یہ سہولت مکمل طورپر مفت میں فراہم کی جاتی ہے، تاہم جاپان سے اس کی درآمد پر ایک لاکھ یورو سے زاید کے اخراجات آئے ہیں۔العامر کا کہنا تھا کہ فی الوقت روزانہ 60 حجاج کرام ان سلیپنگ رومز سے استفادہ کرسکتے ہیں مگر ان کمروں کی تعداد بڑھانے کے نتیجے میں ان سے استفادہ کرنے والوں کی تعداد میں بھی اضافہ ہوسکتا ہے۔

متعلقہ خبریں