نواز شریف جیل میں کبھی رونا شروع کر دیتے ہیں اور کبھی گالیاں دینا شروع کر دیتے ہیں،معروف صحافی

نواز شریف جیل میں کبھی رونا شروع کر دیتے ہیں اور کبھی گالیاں دینا شروع کر دیتے ہیں،معروف صحافی

نواز شریف جیل میں کبھی رونا شروع کر دیتے ہیں اور کبھی گالیاں دینا شروع کر ... 19 جولائی 2018 (11:55) 11:55 AM, July 19, 2018

چوہدری غلام حسین نے کہا کہ نواز شریف جیل میں کبھی رونا شروع کر دیتے ہیں اور کبھی گالیاں دینا شروع کر دیتے ہیں اور کہتے ہیں کہ ان سب کو دیکھ لیں گے، ان سب سے نمٹ لیں گے۔ صحافی نے بتایا کی ان کے کچھ وکلا سے ان کی ملاقات بھی ہو گی جبکہ کچھ نے ان کی حمایت کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ اب یہ لوگ میڈیکل گراؤنڈز پر جیل سے چھُٹکارا حاصل کرنا چاہ رہے ہیں ۔

معروف صحافی چوہدری غلام حسین کا کہنا ہے کہ نواز شریف جیل جانے سے پہلے بڑی بڑی باتیں کرتے تھے کہ میں پھانسی سے نہیں ڈرتا۔لیکن ابھی انہیں جیل میں ایک ہفتہ بھی نہیں گزرا اور وہ جیل میں اذانیں دینے لگ گئے۔

اور کہنے لگ گئے مجھے یہاں سے نکالو۔اگر میں اڈیالہ جیل میں رہ گیا تو میری یہاں سے لاش ہی جائے گی۔ اور پھرموت کے ذمہ دار بھی یہی لوگ ہوں گے۔چوہدری غلام حسین کا کہنا ہے کہ نواز شریف جیل میں کہتے ہیں کہ مجھے بہت گھبراہٹ محسوس ہو رہی ہے اور مجھے چھاتی پر بہت بوجھ محسوس ہو رہا ہے۔خدا کے واسطے ڈاکٹر کو بلاؤ۔ نواز شریف کہتے ہیں کہ اگر میں ان حالات میں جیل رہا تو میری زندگی کا کچھ پتہ نہیں۔

متعلقہ خبریں