کون کہتا ہے کہ پاکستانی نوجوان کسی سے پیچھے ہیں ایسی چیز ایجاد کر لی جس میں خواتین کا فائدہ ہے

کون کہتا ہے کہ پاکستانی نوجوان کسی سے پیچھے ہیں ایسی چیز ایجاد کر لی جس میں خواتین کا فائدہ ہے

کون کہتا ہے کہ پاکستانی نوجوان کسی سے پیچھے ہیں ایسی چیز ایجاد کر لی جس میں ... 17 مئی 2018 (01:54) 1:54 AM, May 17, 2018

کراچی (ویب ڈیسک) بحریہ یونیورسٹی کراچی کے نوجوانوں نے مہندی لگانے والا ایک پرنٹر تیار کیا ہے، جس کی مدد سے خواتین گھنٹوں کے بجائے منٹوں میں مہندی لگاسکیں گی۔تفصیلات کے مطابق کیمرے اور حساس سینسرز پر مشتمل یہ پرنٹر انجکشن کی باریک سوئی کے ذریعے مہندی کا ڈیزائن ہاتھوں پر نقش کرتا ہے۔ پرنٹر کو آپریٹ کرنے کے لیے کسی خصوصی تربیت کی بھی ضرورت نہیں۔پرنٹر ایک کمپیوٹر سافٹ ویئر سے منسلک ہے جس میں سینکڑوں ڈیزائن محفوظ کیے جاسکتے ہیں۔ یہ پرنٹر ہاتھ کو ایک سینسر کے ذریعے تلاش کرے گا اور اپنا کام شروع کردے گا۔ پرنٹنگ کے دوران ایک بٹن دبا کر پرنٹر کو روکا بھی جاسکتا ہے۔ مہندی لگوانے والی خواتین اپنے ڈیزائن بھی سسٹم میں لوڈ کرواسکتی ہیں۔ یہ پرنٹر بحریہ یونیورسٹی کراچی کے نوجوانوں نے تیار کیا ہے اور اس کی نمائش گزشتہ دنوں کراچی ایکسپو سینٹر میں ہونے والی اسٹارٹ اپ کانفرنس میں کی گئی ہے۔پرنٹر بنانے والی ٹیم کے سربراہ انجینئر عبیداﷲ کے مطابق یہ پرنٹر 4 سے 5 ماہ میں تیار کیا گیا ہے۔ انجینئر عبیداللہ کے مطابق یہ پرنٹر ابھی زیر تکمیل ہے اور اس کے نتائج کو مزید بہتر بنانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ پرنٹر تیار کرنے والے نوجوانوں نے پہلے مرحلے میں شاپنگ سینٹرز اور بڑے شاپنگ مالز میں اے ٹی ایم کی طرز پر خود کار مشینیں نصب کرنے کا منصوبہ بنایا ہے، جس کی مدد سے خواتین چند منٹوں میں اپنی پسند کے ڈیزائن کی مہندی لگواسکیں گی۔ اگلے مرحلے میں یہ پرنٹر عوامی سطح پر متعارف کرایا جائے گا اور خواتین اسے گھروں میں بھی استعمال کرسکیں گی

متعلقہ خبریں