سٹراٹولانچ سسٹم نامی امریکی کمپنی نے دنیا کا سب سے بڑا طیارہ بنا لیا-اسکا وزن ا ور لمبائی آپکو حیران کر دے گی

سٹراٹولانچ سسٹم نامی امریکی کمپنی نے دنیا کا سب سے بڑا طیارہ بنا لیا-اسکا وزن ا ور لمبائی آپکو حیران کر دے گی

سٹراٹولانچ سسٹم نامی امریکی کمپنی نے دنیا کا سب سے بڑا طیارہ بنا لیا-اسکا ... 17 مئی 2018 (01:50) 1:50 AM, May 17, 2018

واشنگٹن ( ویب ڈیسک) دنیا کا سب سے بڑا طیارہ اتنا بڑا ہے کہ اسے چلانے کے لیے دو کیبن اور کاک پٹس کی ضرورت ہے۔ گزشتہ سال جون میںسٹراٹولانچ نامی طیارہ متعارف کرایا گیا تھا اور اس کے بعد سے اس طیارے کی آزمائش جاری ہے اور پہلی باقاعدہ پرواز 2019 میں ہوگی۔ مگر گزشتہ دنوں پہلی مرتبہ اس کمپنی کے یوٹیوب پیج پر ایک ویڈیو میں اس طیارے کے رن وے ٹیسٹ کو دکھایا گیا ہے جس میں یہ 46 میل فی گھنٹہ کی رفتار تک پہنچنے میں کامیاب رہا۔ ویسے یہ جان لیں کہ یہ طیارہ اتنا بڑا ہے کہ اس کے بازوﺅں کا گھیراﺅ فٹبال کے گراﺅنڈ سے بھی بڑا ہے ۔یہ طیارہ سٹراٹولانچ سسٹم نامی کمپنی نے تیار کیا ہے جس کی ملکیت مائیکرو سافٹ کے شریک بانی پال ایلن کے پاس ہے۔ پال ایلن کا اس کمپنی کی تشکیل کا مقصد ایسے طیارے کو بناتا تھا جو زمین کے نچلے مدار تک آسان، قابل بھروسا رسائی فراہم کرسکے۔ اس طیارے کے ذریعے راکٹوں کو فضاءمیں لانچ کرنے میں مدد ملے سکے گی اور کمپنی کو توقع ہے کہ اس سے یہ عمل زیادہ سستا ہوجائے گا جبکہ کمرشل اسپیس پروازیں بھی ممکن ہوسکیں گی۔

اس کی 385 فٹ کے پر یا بازو کسی فٹ بال فیلڈ سے زیادہ چوڑے ہیں اور اس طرح اسے دنیا کا سب سے بڑا طیارہ بناتے ہیں۔ اس طیارے کے نوز سے دم تک لمبائی 238 فٹ ہے جبکہ یہ پچاس فٹ لمبا ہے، جبکہ چھ انجن دیئے گئے ہیں۔ اس کا وزن پانچ لاکھ پونڈ ہے اور اس کے دونوں کیبن کے لیے 28 پہیے لگے ہوئے ہیں۔ اسے باقاعدہ پرواز کے لیے اہل قرار دینے سے قبل اس کے کئی طرح کے ٹیسٹ کیے جائیں گے جو کہ ابھی کیے بھی جارہے ہیں۔

متعلقہ خبریں