تین سال کے بچوں پر فرانس میں یہ چیز لازم قرار-جان کر آپ بھی کہینگے کہ یہ بچوں پر ظلم ہے

تین سال کے بچوں پر فرانس میں یہ چیز لازم قرار-جان کر آپ بھی کہینگے کہ یہ بچوں پر ظلم ہے

تین سال کے بچوں پر فرانس میں یہ چیز لازم قرار-جان کر آپ بھی کہینگے کہ یہ بچوں ... 17 مئی 2018 (00:58) 12:58 AM, May 17, 2018

فرانسیسی قانون کے مطابق بچوں کی اسکولوں میں تعلیم کا آغاز چھ سال سے ہوتا ہے تاہم 1989ء سے والدین قانونی حق رکھتے ہیں کہ تین سالہ بچوں کا پری اسکول میں داخلہ کروایا جائے۔

فرانسیسی صدر میکرون نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے متعدد پیغامات میں یہ واضح کیا کہ اس عمر میں بچوں کا اسکول میں رہنا نہایت فائدہ مند ثابت ہوگا کیونکہ اس عمر میں بچے بولنے، کھیلنے اور پینٹنگ کی تربیت حاصل کرتے ہیں۔

صدارتی اعلامیے کے مطابق اس اقدام کا مقصد فرانسیسی نظام تعلیم میں برابری قائم کرنا ہے اور بیرون ملک مقیم فرانسیسی اور غریب طبقے سے منسلک افراد کو تعلیم فراہم کرنے کے برابری کے مواقع فراہم کرنا ہے۔

فرانسیسی صدر کا کہنا ہے کہ چونکہ فرانس کے جزیرے کورسیکا اور فرانس کے دیگر مضافاتی علاقوں کے رہائشی پیرس میں مقیم بچوں کے والدین کی طرح اپنے بچوں کا پری اسکول میں داخلہ نہیں کرواتے لہٰذا وہ تعلیمی نظام میں ناقابل قبول تفریق کو ختم کرنا چاہتے ہیں۔

واضح رہے کہ فرانس میں ، بچے 2 سال (52 فی صد بچوں کے لئے) کی عمر میں اور یا 3 سال کی عمر میں (تقریبا 100٪ تک) ابتدائی اسکول شروع کرتے ہیں- اسکول میں بچوں کو 2 یا 3 سال ابتدائی تعلیم کے عمل میں رکھا جاتا ہے-فرانسیسی بچوں کو دوسرے یورپی ممالک (700 گھنٹے سے زائد کم آسٹریا، جرمنی اور فینلینڈ کے مقابلے میں) زیادہ (تقریبا 900 گھنٹے ، اٹلی اور نیدرلینڈ جیسے) ابتدائی تعلیم میں رکھا جاتا ہے-

متعلقہ خبریں