برائن ہاک کو ایران کے حوالے سے خصوصی نمائندہ مقرر کر دیا ہے۔

برائن ہاک کو ایران کے حوالے سے خصوصی نمائندہ مقرر کر دیا ہے۔

برائن ہاک کو ایران کے حوالے سے خصوصی نمائندہ مقرر کر دیا ہے۔ 17 اگست 2018 (12:36) 12:36 PM, August 17, 2018

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے اپنے ایک سینئر مشیر برائن ہاک کو ایران کے حوالے سے خصوصی نمائندہ مقرر کر دیا ہے۔

جمعرات کے روز یہ پیش رفت ایسے موقع پر سامنے آئی ہے جب امریکی انتظامیہ ایران پر اقتصادی دباؤ کو بھرپور بنانے کی تیاری کر رہی ہے تا کہ تہران کو اُس کے جوہری پروگرام اور مشرق وسطی میں دہشت گرد جماعتوں کی سپورٹ ختم کرنے پر مجبور کیا جا سکے۔پومپیو نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ برائن ہاک تہران کے حوالے سے امریکی وزارت خارجہ کے اقدامات میں رابطہ کاری کے واسطے ایران سے متعلق ایک خصوصی ورکنگ گروپ کی قیادت کریں گے۔یہ اعلان حیران کُن نہیں ہے۔ اس لیے کہ برائن ہاک یورپ اور ایشیا میں حلیف ممالک کے ساتھ امریکی وزارت خارجہ کی کوششوں کی قیادت کر رہے تھے تا کہ ان ممالک کو آئندہ نومبر سے ایرانی تیل کی درآمد روک دینے پر قائل کیا جا سکے۔پومپو نے مزید بتایا کہ "ایران سے متعلق خصوصی ورکنگ گروپ اپنی رپورٹیں براہ راست مجھے پیش کرے گا"۔رواں برس مئی میں ڈونلڈ ٹرمپ نے جوہری معاہدے سے امریکا کی علاحدگی کا اعلان کیا تھا۔ یہ معاہدہ 2015ء میں تہران اور دنیا کی چھ بڑی طاقتوں کے درمیان طے پایا تھا۔ امریکا کا کہنا ہے کہ وہ ایران پر عائد پابندیاں صرف اُس صورت میں اٹھائے گا جب تہران زیادہ سخت سمجھوتے کے واسطے مذاکرات پر آمادگی ظاہر کرے گا،ٹرمپ یہ کہہ چکے ہیں کہ وہ ایران کے صدر کے ساتھ ملاقات کے لیے تیار ہیں تاہم تہران کا اصرار ہے کہ بات چیت کی طرف واپسی اُس صورت میں ہو سکتی ہے جب امریکا جوہری معاہدے میں واپس لوٹ آئے۔

متعلقہ خبریں