وسطی امریکہ اور جنوبی شمالی امریکہ میں پائی جانے والی یہ چهوٹی مچهلیاں جن کی چار آنکهیں ہیں

وسطی امریکہ اور جنوبی شمالی امریکہ میں پائی جانے والی یہ چهوٹی مچهلیاں جن کی چار آنکهیں ہیں

وسطی امریکہ اور جنوبی شمالی امریکہ میں پائی جانے والی یہ چهوٹی مچهلیاں جن کی ... 16 مئی 2018 (18:21) 6:21 PM, May 16, 2018

میکسیکو (اردو دنیا ویب ڈیسک) وسطی امریکہ اور جنوبی شمالی امریکہ میں پائی جانے والی یہ چهوٹی مچهلیاں جن کی چار آنکهیں ہیں. یہ مچهلیاں زیادہ تر تازے پانی میں پائی جاتی ہیں. چهوٹے حشرات، کیڑے مکوڑے ان کی خوراک ہیں اس لئے یہ زیادہ تر پانی کی اوپری سطح پر تیرتی رہتی ہیں.

اس چار آنکهوں والی مچهلی کے نام سے قطع نظر، اصل میں چار آنکهوں والی مچهلی کی آنکهیں دو ہی ہیں.

دراصل یہ آنکهیں ایک ٹشو کے بینڈ کی وجہ سے تقسیم ہوگئی ہیں جس سے ایک آنکھ دو حصوں میں تقسیم ہو گئی ہے.

یہ عجیب موافقت اس چار آنکھوں والی مچھلی کو ایک وقت میں سطح کے اوپر اور پانی کے اندر نیچے کی جانب دیکهنے میں مدد فراہم کرتی ہے جس سے انہیں ایک ہی وقت میں شکار اور ممکنہ شکاری کے خطرات سے نمٹنے کے لیے نیچے پانی میں دیکهتے رہنے کا موقع ملتا ہے.

ارتقائی مراحل کے دوران مچهلی نے آدهی آنکھ کو اوپری سطح اور باقی آدهی آنکھ کو نیچے دیکهنے کے لئے ڈهال لیا. یہ مچهلی آنکھ کے دونوں حصوں میں ایک ہی لینس کا استعمال کرتی ہے. لینس کی موٹائی اور وکر (curve) اوپر اور نیچے کی آنکھ کے لئے مختلف طریقوں سے پیش آتی ہے، اس کی وجہ یہ ہے کہ پانی کی سطح پر اور نیچے پانی میں روشنی کی مقدار مختلف ہوتی ہے.

چونکہ چار آنکھوں والی مچھلی نے اپنی زندگی کا زیادہ حصہ پانی کی سطح پر گزارتی ہے اور یہ صرف اس وقت پانی میں نیچے غوطہ لگاتی ہے جب اس کی اوپری سطح کو دیکهتی آنکھ خشک ہونے لگتی اور اسے تر کرنے کے لئے اسے نیچے جا کے واپس آنا پڑتا ہے.

متعلقہ خبریں