ایک مرتبہ حضرت نوح علیہ السلام ایک راستے سے گزر رہے تھےکہ ایک بوڑھا شخص نظر آیا اس میں چلنے کی بھی تو فیق نہیں تھی حضرت نوح علیہ السلام نے اس سے پوچھا کہ :

ایک مرتبہ حضرت نوح علیہ السلام ایک راستے سے گزر رہے تھےکہ ایک بوڑھا شخص نظر آیا اس میں چلنے کی بھی تو فیق نہیں تھی حضرت نوح علیہ السلام نے اس سے پوچھا کہ :"تم راستے میں اس حال میں کیوں پڑے ہو,کیا تمہرا گھر کوئی نہیں ہے

ایک مرتبہ حضرت نوح علیہ السلام ایک راستے سے گزر رہے تھےکہ ایک بوڑھا شخص نظر ... 16 مئی 2018 (15:34) 3:34 PM, May 16, 2018

ایک مرتبہ حضرت نوح علیہ السلام ایک راستے سے گزر رہے تھےکہ ایک بوڑھا شخص نظر آیا اس میں چلنے کی بھی تو فیق نہیں تھی حضرت نوح علیہ السلام نے اس سے پوچھا کہ :"تم راستے میں اس حال میں کیوں پڑے ہو,کیا تمہرا گھر کوئی نہیں ہے" بوڑھے شخص نے جواب دیا میرے سات بیٹے ہیں انہوں نے مجھے گھر سے اس لیے نکال دیا کہ میں بوڑھا ہو چکا ہوں اور میرے پاس کھانے کے لیے بھی کچھ نہیں ہے"

یہ سن کر حضرت نوح علیہ السلام اسے اپنے گھر لے گئے اور کہا کہ "تم اس گھر میں رہو تمہارے کھانے کا بندوبست میں کروں گا "اس کے بعد حضرت نوح علیہ السلام نے دعا کی اور ایک اجنبی شخص گھر میں داخل ہوا اس کے ہاتھ میں ایک دسترخوان تھا جس میں طرح طرح کے کھانے تھے اس شخص نے کہا کہ "یہ کھا نا میں آپ علیہ السلام کے مہمان کے لیے لایا ہو ں آپ اسے کھلا دیں اور یہ بھی کہا کہ اللّٰہ کسی کو بھوکا نہیں رکھتا"وہ بوڑھا حضرت نوح علیہالسلام پہ ایمان لے آیا

متعلقہ خبریں