بیگم کلثوم نواز کے کمرے میں بغیر اجازت داخل ہونے کی کوشش نے ایک شخص کو پولیس کی گرفت میں پہنچا دیا۔

بیگم کلثوم نواز کے کمرے میں بغیر اجازت داخل ہونے کی کوشش نے ایک شخص کو پولیس کی گرفت میں پہنچا دیا۔

بیگم کلثوم نواز کے کمرے میں بغیر اجازت داخل ہونے کی کوشش نے ایک شخص کو پولیس ... 16 جون 2018 (20:33) 8:33 PM, June 16, 2018

لندن: ہارلے سٹریٹ کلینک میں زیر علاج بیگم کلثوم نواز کے کمرے میں ایک مشتبہ شخص نے داخل ہونے کی کوشش کی جسے سیکیورٹی حکام نے روک لیا۔

تفصیلات کے مطابق بیگم کلثوم نواز لندن ہارلےاسٹریٹ کلینک کے انتہائی نگہداشت وارڈ میں زیر علاج ہیں اور انہیں مشین کے ذریعے مصنوعی سانس فراہم کیا جارہا ہے۔برطانیہ میں زیرعلاج سابق وزیراعظم کی اہلیہ کلثوم نواز کے کمرے میں مشتبہ شخص نے داخل ہونے کی کوشش کی جسے انتظامیہ نے ناکام بنادی، پولیس نے تفتیش مکمل ہونے کے بعد ڈاکٹر نوید نامی شخص کو چھوڑ دیا۔واقعہ ہارلے اسٹریٹ کلینک کی پہلی منزل پر پیش آیا جہاں سابق وزیراعظم نواز شریف کی اہلیہ کلثوم نواز کو وینٹی لیٹر پر رکھا گیا ہے ، کلثوم نواز کے کمرے میں داخل ہونے ولالے کی شناخت ڈاکٹر نوید کے نام سے ہوئی ہے۔نوید نے سیکیورٹی کو کارڈ دکھا کر ایسا ظاہر کیا جیسے وہ ہارلے کلینک میں ڈاکٹر ہے ، نوید نے کہا کہ وہ بیگم کلثوم نواز سے ملنے کے لیے آیا تھا اور اس نے کچھ غلط نہیں کیا بعدازاں پولیس نے ڈاکٹر نوید کو وارننگ دے کر چھوڑ دیا اور ہسپتال سے دور رہنے کی ہدایت کی ۔

حسین نواز کے مطابق مشتبہ شخص خود کو ڈاکٹر ظاہر کرتے ہوئے والدہ کے کمرے میں داخل ہونے کی کوشش کررہا تھا، جب انتظامیہ تک معاملہ پہنچایا تو وہ بھاگنے کی کوشش کرنے لگ۔

پولیس نے مشتبہ شخص سے تفتیش شروع کی تو اُس نے مؤقف اختیار کیا کہ ’میں کلثوم نواز کی عیادت کے لیے آیا تھا، بغیر اجازت کمرے میں داخل ہونے کوشش غلطی تھی‘۔لندن پولیس نے ہارلےاسٹریٹ میں بغیر اجازت داخل ہونے والےشخص کو تفتیش مکمل ہونے کے بعد وارننگ دے کر رہا کردیا، تفتیشی افسر کے مطابق نوید فاروق کو اسپتال سے دور رہنے کی ہدایت کردی گئی۔

دوسری جانب مشتبہ شخص نوید فاروق کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ عید الفطر کی وجہ سے کلثوم نواز کی طبیعت اور خیریت دریافت کرنے کے لیے اسپتال پہنچا تاکہ نوازشریف اور اہل خانہ سے اظہار ہمدردی کرسکوں، کلینک میں داخل ہونے کے بعد احساس ہوا کہ میں انتہائی نگہداشت وارڈ میں پہنچ گیا۔

خیال رہے سابق وزیراعظم نواز شریف کی اہلیہ کلثوم نواز کی طبیعت خراب ہونے کے بعد انہیں ایک بار پھر ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق کلثوم نواز کو گھر پر چیک کرنے والے ڈاکٹرز نے گزشتہ روز ان کا معائنہ کیا اور کمزوری کے باعث انہیں ہسپتال منتقل کرنے کا مشورہ دیا تھا جس کے بعد انہیں ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز لندن میں ہیں۔ شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت آج بھی ہوگی تاہم یہ دونوں آج عدالت میں پیش نہیں ہوں گے۔ نواز شریف اور مریم نواز غیر ملکی ایئر لائن کے ذریعے براستہ دوحہ لندن گئے۔سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے صاحبزادے سلمان شہباز بھی لندن میں ہیں۔ شریف خاندان کے لندن جانے کا مقصد نواز شریف کی اہلیہ کلثوم نواز کی عیادت کرنا ہے جو کینسر کے خلاف اپنی جنگ لڑ رہی ہیں۔ نواز شریف اور مریم نواز عید کے بعد وطن واپس آجائیں گے۔

متعلقہ خبریں