فٹ بال ورلڈ کپ کے فائنل میں کروشین صدر اپنی ٹیم کی ہار پر رو دیں

فٹ بال ورلڈ کپ کے فائنل میں کروشین صدر اپنی ٹیم کی ہار پر رو دیں

فٹ بال ورلڈ کپ کے فائنل میں کروشین صدر اپنی ٹیم کی ہار پر رو دیں 16 جولائی 2018 (21:50) 9:50 PM, July 16, 2018

کروشیا کے فٹ بال شائقین کے لیے فرانس کی جیت اور اپنی ٹیم کی ہار کسی بڑے صدمے سے کم نہیں مگر اس کے ساتھ ساتھ انہیں اس بات پر بھی فخر ہےکہ ان کی ٹیم کم زور ہونے کے باوجود نہ صرف فائنل میں پہنچی بلکہ بھرپور کھیل کا مظاہرہ کیا۔

فٹ بال ورلڈ کپ کے فائنل میں کئی عالمی رہ نما موجود تھے۔ ان میں روسی صدر ولادی میر پوتین، فرانس کے عمانویل میکروں اور کروشیا کی خاتون صدر اور ملکہ حسینہ ’کولینڈا گرابگرا کیٹاروفیٹک‘ بھی موجود تھیں۔جب ریفری نے فرانسیسی ٹیم کی جیت اور کروشین کے ہارنے کی آخری سیٹی بجائی تو عوام کی طرح کروشین صدر بھی اپنے جذبات پر قابو نہ رکھ سکیں۔ میچ میں نمایاں کردار ادا کرنے والے ٹیم کے کپتان ماھر لوکا موڈریک کو گلے لگایا اور انہیں ہارنے پر کوسنے کے بجائے آخر تک مقابلہ کرنے پر داد تحسین پیش کی۔ تاہم اس موقع پر صدر کیٹاروفیٹک کی آنکھوں سے آنسوؤں کی لڑی جاری ہوگئی اور یہ منظر دنیا بھر کے ذرائع ابلاغ میں دیکھا گیا۔وہ ایک طرف تو فرانسیسی ٹیم اور اس کے کپتان کو جیت پر مبارک باد پیش کررہی تھیں تو ساتھ ہی اپنی ٹیم کے ہیروز کو بھی کھیل کا کامیاب مظاہرہ کرنے پران کی حوصلہ افزائی کررہی تھیں۔

یاد رہیکہ فیفا ورلڈ کپ 2018ء کے فائنل میں فرانس نے کروئیشیا کو چار۔دو سے شکست دے کر دوسری مرتبہ فٹبال کی دنیا پر چار سال کے لئے حکمرانی کا تاج سر پر سجا لیا۔

فرانس اور کروئیشیا کی ٹیموں نے میچ کے آغاز سے ہی جارحانہ کھیل پیش کیا اور ایک دوسرے کے گول پر کئی حملے کیے۔ کھیل کے 18 منٹ میں گریزمین کی فری کک پر کروئیشیا کے دفاعی کھلاڑی ماریو مینڈزیوکچ ہیڈر کے ذریعے گیند اپنے ہی گول میں پھینک کر حریف ٹیم کو ایک گول کی برتری دلا دی۔رواں ورلڈ کپ میں یہ مجموعی طور پر بارہواں جبکہ کسی بھی ورلڈ کپ کے فائنل میں پہلا اون گول ہے۔ایک گول کے خسارے میں جانے کے باوجود کروئیشیا کے کھلاڑیوں نے ہمت نہیں ہاری اور حریف ٹیم کے گول پر حملوں کا سلسلہ جاری رکھا۔ 28 ویں منٹ میں ایوان پیری سیچ نے شاندار کک گول کر کے میچ ایک، ایک گول سے برابر کر دیا۔کھیل کے 38 ویں منٹ میں کروئیشیا کے کھلاڑی کی طرف سے ڈی میں ہینڈبال پر فرانس کو پنالٹی کک ملی جس پر گریزمین نے گول کر کے اپنی ٹیم کو ایک بار پھر برتری دلا دی اور پہلا ہاف اسی اسکور پر ختم ہوا۔ اس ہاف میں فرانس کے دو کھلاڑیوں این گولو کانتے اور لوکاس ہرنانڈیز کو یلو کارڈ دکھائے گئےدوسرے ہاف کا آغاز سنسنی خیز انداز میں ہوا۔ 59 ویں منٹ میں پوگبا نے شاندار گول کر کے برتری تین۔ایک کر دی اور صرف چھ منٹ بعد ہی امباپے نے ایک اور گول کر کے برتری چار۔ایک کے ساتھ مزید مستحکم کر دی۔کھیل کے 69ویں منٹ میں فرانس کے گول کیپر کی غلطی کے باعث کروئیشیا کے اسٹرائیکر ماریو مینڈ زیوکیچ نے گیند گول میں پھینک کر اسکور 4-2 کر دیا۔اس کے بعد کوئی بھی ٹیم مزید گول نہ کر سکی اور فرانس نے کروئیشیا کو شکست دے کر فیفا ورلڈ کپ ٹائٹل دوسری مرتبہ اپنے نام کر لیا۔

متعلقہ خبریں