روپے کی تیز رفتار ڈالر کی دم کے قریب پہنچنے کی بھی ہر کوشش ناکام۔

روپے کی تیز رفتار ڈالر کی دم کے قریب پہنچنے کی بھی ہر کوشش ناکام۔

روپے کی تیز رفتار ڈالر کی دم کے قریب پہنچنے کی بھی ہر کوشش ناکام۔ 15 جون 2018 (03:34) 3:34 AM, June 15, 2018

روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قیمت میں تیسرے روز بھی اضافہ جاری ہے -شروع میں ڈالر کی قیمت میں ستر پیسے تک کا اضافہ ہوا لیکن اب ڈالر کی قیمت میں چالیس پیسے کا اضافہ ہو گیا ہے اور ڈالر کی قیمت ایک سو بیس روپے انتالیس پیسے ہو گئی ہے-اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت فروخت ایک سو اکیس اور ایک سو بائیس ہے روپے کے مقابلے میں یورو کی قیمت چھبیس پیسے کم ہو کر ایک سو اکتالیس روپے پینتیس پیسے ہو گئی ہے پاؤنڈ کی قیمت اکاون پیسے کی کمی کے ساتھ ایک سو ساٹھ روپے چالیس پیسے ہو گئ ہے اور یوآن پانچ پیسے کے اضافے کے ساتھ اٹھارہ روپے اناسی پیسے کا ہوگیا ہے - تین روز میں ڈالر کی مقابلے میں روپے کی قیمت میں چار روپے اٹھہتر پیسے کا اضافہ ہو چکا ہے -

یاد رہیکہ اس سے قبل بھی انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قدر میں مسلسل اضافےکا رجحان جاری ہے۔ ہفتے کے پہلے دن، کاروبار کے دوران ڈالر ایک سو اکیس روپے پچیس پیسے میں فروخت کیا گیا۔فاریکس ڈیلرز کے مطابق، کاروباری ہفتے کے پہلے دن روپے کی قدر میں ساڑھے پانچ روپے کا اضافہ ہوا ہے۔ بڑھتی قدر کے سبب ڈالر اوپن مارکیٹ میں بھی نایاب ہوگیا۔ معاشی تجزیہ کاروں کے مطابق، ڈالر کی بڑھتی ہوئی قیمت معاشی ترقی میں ایک بڑی رکاوٹ ہے۔ موجودہ صورتحال میں پاکستان کو انٹرنیشنل مانیٹرنگ فنڈ سےایک اور بیل آوٹ پروگرام کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔فارن اکسچینج ٹریڈرز کے مطابق، پاکستان کے مرکزی اسٹیٹ بینک نے روپے کی قدر میں مزید پانچ فیصد کی کمی کردی ہے۔ ٹریڈرز کہتے ہیں کہ اس کمی کے بعد، ڈالر 121 روپے اور اکیس پیسے پر خریدا جارہا ہے۔

متعلقہ خبریں