میں نے نقیب اللہ کو پکڑوایا، نہ مارا ہے۔ راؤ انوار کا نیا یو ٹرن

میں نے نقیب اللہ کو پکڑوایا، نہ مارا ہے۔ راؤ انوار کا نیا یو ٹرن

میں نے نقیب اللہ کو پکڑوایا، نہ مارا ہے۔ راؤ انوار کا نیا یو ٹرن 14 جون 2018 (15:55) 3:55 PM, June 14, 2018

نقیب اللہ قتل کیس میں گرفتار راؤ انوار کا کہنا ہے کہ نہ میں نے نقیب اللہ کو پکڑوایا، نہ مارا سب ریکارڈ موجود ہے ، پ پروفیشنل جیلسی کی وجہ سے مجھ پر قتل کا مقدمہ درج کیا گیا۔

انسداد دہشتگردی عدالت نے مقتول کے وکلا کو دلائل کیلئے آخری مہلت دے دی اور کہا کہ آئندہ سماعت پر مقتول کے وکلا حاظر نہیں ہوئے تو ضمانت پر قانون کے مطابق فیصلہ کر دیں گے۔

نقیب اللہ قتل کیس کی انسداد دہشتگردی عدالت میں سماعت ہوئی ، گرفتار سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کو دس دیگر ملزمان کے ساتھ انسداد دہشتگردی عدالت میں پیش کیا گیا۔

یاد رہے کہ نقیب اللّٰہ محسود کے قاتل راؤ انوار کو وزارت داخلہ نے بغیر کسی نوٹیفیکیش کے سب جیل میں رکھا ہوا ہے نقیب اللّٰہ کے والد محمد خان نے راؤانوار کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں درخواست دائر کرائی- -ذرائع کے مطابق نقیب اللّٰہ محسود کے والد کا کہنا تھا کہ :" راؤ انوار کو گھر میں سب جیل بنا کے رکھا گیاہے جو کہ غیر قانونی ہے -ہم راؤ انوار کے گرد گھیرا تنگ کریں گے -وہ بہت طاقتور آدمی ہے -لیکن ہم بھی بہت محنتی ہیں -" ان کا کہنا تھا کہ :" نقیب اللّٰہ میرا بیٹا تھا اس کو ابھی تک بھولا نہیں ہوں - اور نہ ہی اس کا سودا کروں گا "۔یاد رہے کہ نقیب اللہ محسود کو ایک فیک انکاؤنٹر میں قتل کردیاگیا تھا جس میں ملوث راؤ انوار خود کو سپریم کورٹ میں پیش کیا تھا۔

متعلقہ خبریں