حمد باری تعالٰی

حمد باری تعالٰی

حمد باری تعالٰی 14 جون 2018 (03:45) 3:45 AM, June 14, 2018

تیری عظمتوں سے ہوں بے خبر

یہ میری نظر کا قصور ہے!

تیری راہ گزر میں قدم قدم

کہیں عرش ہے کہیں طور ہے!

یہ بجا ہے مالک دو جہاں

میری بندگی میں قصور ہے!

یہ خطہ ہے میری خطہ مگر

تیرا نام بی تو غفور ہے

یہ بتا تجھ سے ملوں کہاں

مجھے تجھ سے ملنا ضرور ہے!

کہیں دل کی شرط نا ڈالنا!

ابھی دل گناہوں سے چور ہے!

تو بخش دے میرے سب گناہ!

تیری ذات رحیم و غفور ہے!

متعلقہ خبریں