تیونس میں اسامہ بن لادن کے سابق محافظ تیونسی شہری

تیونس میں اسامہ بن لادن کے سابق محافظ تیونسی شہری "سامی العیدودی" کے ساتھ تحقیقات کا آغاز

تیونس میں اسامہ بن لادن کے سابق محافظ تیونسی شہری "سامی العیدودی" کے ساتھ ... 14 جولائی 2018 (15:44) 3:44 PM, July 14, 2018

تیونس میں حکام نے جمعے کے روز اعلان کیا ہے کہ القاعدہ تنظیم کے بانی اسامہ بن لادن کے سابق محافظ تیونسی شہری " سامی العیدودی " کے ساتھ تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ یہ جرمنی کی جانب سے سامی کو تیونس کے حوالے کیے جانے کے فوری بعد سامنے آیا ہے۔ سامی گزشتہ 20 برس سے زیادہ عرصے سے جرمنی میں مقیم رہا۔

تیونس میں انسداد دہشت گردی سے متعلق عدالتی سرکاری ترجمان سفیان السلیطی نے بتایا کہ جرمن حکام نے جمعے کے روز تیونسی شہری " سامی " کو بے دخل کر دیا۔ یہ کارروائی سامی کے خلاف تیونس سے جاری ہونے والے بین الاقوامی وارنٹ کی بنیاد پر عمل میں آئی۔ ترجمان کے مطابق تیونس کی جنرل پراسیکیوشن نے دہشت گردی سے متعلق جرائم کی چھان بین کرنے والی قومی ٹیم کو سامی کے ساتھ تحقیقات کی اجازت دے دی ہے۔السلیطی نے مزید بتایا کہ سامی العیدودی نے افغانستان میں عسکری تربیت حاصل کی تھی اور پھر وہ القاعدہ کے سابق سربراہ اسامہ بن لادن کا ذاتی محافظ بن گیا۔ اس کے علاوہ سامی جرمنی میں شدت پسندی کی سرگرمیوں میں بھی ملوث رہا۔

متعلقہ خبریں