مستونگ میں خودکش حملے میں شہید ہو نیوالوں کی تدفین جاری

مستونگ میں خودکش حملے میں شہید ہو نیوالوں کی تدفین جاری

مستونگ میں خودکش حملے میں شہید ہو نیوالوں کی تدفین جاری 14 جولائی 2018 (15:15) 3:15 PM, July 14, 2018

بلوچستان کے ضلع مستونگ میں جمعے کے خودکش حملے میںشہادتوں کی تعداد 129 ہو گئی ہے اور واقعے کے بعد صوبے بھر میں فضا سوگوار ہے۔

حکام کا کہنا ہے دھماکے کے 120 سے زائد زخمی مختلف اسپتالوں میں زیرِ علاج ہیں جن میں سے بعض کی حالت تشویش ناک ہے۔دھماکے میں ہلاک ہونے والے افراد کی تدفین کا سلسلہ ہفتے کی صبح سے ہی جاری ہے۔دھماکہ جمعے کی دوپہر مستونگ کے علاقے درینگڑھ میں بلوچستان عوامی پارٹی کی جانب سے صوبائی اسمبلی کے حلقے پی بی 32 سے امیدوار نواب زادہ سراج رئیسانی کی ایک کارنر میٹنگ کے دوران ہوا تھا۔درینگڑھ کوئٹہ سے ایران کی طرف جاتے ہوئے تقریباً 38 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔دھماکے کے بیشتر زخمیوں کو کوئٹہ منتقل کیا گیا ہے جہاں اسپتالوں میں ہنگامی حالت نافذ ہےدھماکے کے بیشتر زخمیوں کو کوئٹہ منتقل کیا گیا ہے جہاں اسپتالوں میں ہنگامی حالت نافذ ہے۔ابتدائی تفتیش کے مطابق خود کش حملہ آور جلسے کے شرکا کے درمیان موجود تھا جس نے خود کو اس وقت دھماکے سے اڑالیا تھا جب نواب زادہ رئیسانی نے کارنر میٹنگ سے خطاب شروع کیا تھا۔اس حملے کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم داعش نے قبول کی ہے جو اس سے قبل بھی بلوچستان میں ہونے والے کئی حملوں اور دھماکوں کی ذمہ داری قبول کرچکی ہے۔

متعلقہ خبریں