سابق صدر پرویز مشرف کے بلاک کئے گئے شناختی کارڈ اور پاسپورٹ کیلئے چیف جسٹس کا بڑا حکم

سابق صدر پرویز مشرف کے بلاک کئے گئے شناختی کارڈ اور پاسپورٹ کیلئے چیف جسٹس کا بڑا حکم

سابق صدر پرویز مشرف کے بلاک کئے گئے شناختی کارڈ اور پاسپورٹ کیلئے چیف جسٹس ... 11 جون 2018 (15:02) 3:02 PM, June 11, 2018

لاہور : چیف جسٹس آف پاکستان نے پرویز مشرف کے ٹرائل کیلئے دو روز میں خصوصی عدالت قائم کرنے کا حکم دیتے ہوئے نادرا کو سابق صدر پرویز مشرف کے بلاک کئے گئے شناختی کارڈ اور پاسپورٹ کھولنے کی ہدایت کر دی۔چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی خصوصی بینچ نے سپریم کورٹ لاہوررجسٹری میں مختلف کیسز کی سماعت کی۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سابق صدر پرویز مشرف کی وطن واپسی کے معاملے کی سماعت کی۔

چیئرمین نادرا نے بتایا کہ پرویز مشرف کی واپسی کارڈ کے بلاک ہونے کی وجہ سے ممکن نہیں ہے، جس پر چیف جسٹس نے قرار دیا کہ عدالت نے پرویز مشرف کو واپسی کیلئے تحفظ دیا تھا، ایئر پورٹ سے عدالت تک پرویز مشرف کو گرفتار نہ کیا جائے، کارڈ بلاک کر کے کیوں ان کی واپسی روکنے کا عذر پیدا کر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ 7 جون کو پرویزمشرف سے متعلق تاحیات نااہلی کیس میں چیف جسٹس نے سابق صدرکو 13 جون کو طلب کرتے ہوئے 13 ریمارکس دیے تھے کہ پرویزمشرف وطن واپس آکرمقدمات کا سامنا کریں، انہیں گرفتار نہیں کیا جائے گا۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے پرویز مشرف کی نا اہلی کے خلاف اپیل کی سماعت کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ 13 جون کولاہور رجسٹری آجائیں، انھیں پیشی تک گرفتار نہیں کیا جائے گا۔

چیئرمین نادرا عثمان یوسف مبین عدالت میں پیش ہوئے اورعدالت کو بتایا کہ شناختی کارڈ بلاک ہونے کی وجہ سے موجودہ صورتحال میں پرویزمشرف کا پاکستان آنا ممکن نہیں۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ ہم نے پرویز مشرف کووطن واپسی کےلئے تحفظ دیاتھا، شناختی کارڈ بلاک کرکے کیوں رکاوٹ پیدا کررہے ہیں ۔

جس کے بعد نادرا کی جانب سے سابق صدر اور آل پاکستان مسلم لیگ کے سربراہ پرویز مشرف کا شناختی کارڈ بلاک کردیا گیا تھا، جس کے باعث ان کا پاسپورٹ بھی منسوخ ہوگیا تھا۔

چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا پرویز مشرف واپس آئیں اور اپنے مقدمات کا سامنا کریں۔

متعلقہ خبریں