خود کو مسیح قرار دینے والا شخص عراق پولیس کی حراست میں

خود کو مسیح قرار دینے والا شخص عراق پولیس کی حراست میں

خود کو مسیح قرار دینے والا شخص عراق پولیس کی حراست میں 11 جولائی 2018 (16:31) 4:31 PM, July 11, 2018

عراق کی پولیس نے ایک ایسے شخص کو حراست میں لیا ہے جس پر عیسیٰ مسیحی ہونے کا دعویٰ کرنے کا الزام عاید کیا گیا ہے۔

عرب میڈیاکے مطابق حالیہ ایام میں سوشل میڈیا پر ایک معمر شخص کی خبریں وائرل ہوئیں جن میں اسے ایک ریکارڈڈ فوٹیج میں خود کو مسیح قرار دیتے سنا اور دیکھا جا سکتا ہے۔گرفتاری کے بعد اس کی ایک دوسری فوٹیج بھی سامنے آئی ہے جس میں اس نے اپنی غلطی کا اعتراف کیا ہے اور کہا ہے اس نے مسیح ہونے کا دعویٰ ’لاعلمی‘ میں کیا تھا۔پہلی فوٹیج میں اس نے اپنا تعارف ’الدنیوی ھاشم سھم جبر‘ کرایا اور کہا کہ حقیقت میں وہ ’یسوع مسیح‘ ہیں اور اُنہیں خدا نے زمین میں عدل وانصاف کے قیام کے لیے مامور کیا ہے۔ فوٹیج میں اسے صاف دکھائی نہیں دیا گیا تاہم اسے یہ کہتے سنا جا سکتا ہے کہ ’مجھے تمام مذاہب‘ کے لیے بھیجا گیا ہے۔سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی فوٹیج کے بعد پولیس حرکت میں آئی اور عیسیٰ مسیح ہونے کے نام نہاد دعوے دار کو بغداد کے قریب الکرخ کے مقام سے گرفتار کرلیا۔

متعلقہ خبریں