ملک میں مسلمانوں کی مذہبی آزادی کے لیےقانون سازی کریں گے۔فرانسیسی صدر

ملک میں مسلمانوں کی مذہبی آزادی کے لیےقانون سازی کریں گے۔فرانسیسی صدر

ملک میں مسلمانوں کی مذہبی آزادی کے لیےقانون سازی کریں گے۔فرانسیسی صدر 10 جولائی 2018 (16:47) 4:47 PM, July 10, 2018

فرانسیسی صدر عمانویل ماکروں نے سوموار کے روز پارلیمنٹ سے خطاب میں اسلام کے حوالے سے ایک پُراسرار بیان دیا جس پر سیاسی حلقوں میں ملے جلے تبصرے جاری ہیں۔ انہوں نے یقین دلایا کہ وہ ملک میں مسلمانوں مذہبی آزادی کے لیےقانون سازی کریں گے۔

فرانسیسی صدر نے مغربی پیرس میں 'فرسائی' کے مقام پر پارلیمنٹ کے اجلاس سے خطاب میں کہا کہ 'اسلام اور جمہوریہ فرانس کے درمیان پیچیدگی کا کوئی سبب ہرگز نہیں ہے'۔انہوں نے مزید کہا کہ وہ خزاں کے پارلیمانی سیزن میں فرانس میں مسلمانوں کے امور کو مزید سہل بنانے کے لیے نئے قواعد وضع کریں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم مسلمانوں کو اپنے ملک میں اپنے مذہب کے مطابق زندگیاں بسرکرنے کے لیے مزید سہولیات مہیا کریں گے اور انہیں ہرممکن آزادی فراہم کریں گے تاکہ وہ اپنے مذہبی امور کو کسی رکاوٹ کےبغیر ادا کرسکیں۔

متعلقہ خبریں