قوم کے پیسے واپس نہ کیےتو جائیدادیں بھی ضبط کرلی جائیں گی۔چیف جسٹس کی دبنگ تنبیہہ

قوم کے پیسے واپس نہ کیےتو جائیدادیں بھی ضبط کرلی جائیں گی۔چیف جسٹس کی دبنگ تنبیہہ

قوم کے پیسے واپس نہ کیےتو جائیدادیں بھی ضبط کرلی جائیں گی۔چیف جسٹس کی دبنگ ... 08 جون 2018 (14:49) 2:49 PM, June 08, 2018

سپریم کورٹ نے قرض معاف کروانے والی دو سو بائیس کمپنیوں سے ایک ہفتے میں جواب طلب کرلیا، چیف جسٹس نےریمارکس دیے قوم کے پیسے واپس نہ کیے تو معاملہ نیب کے حوالے کردیں گے، جائیدادیں بھی ضبط کرلی جائیں گی۔تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں چیف جسٹس کی سربراہی میں 54 ارب روپےکےقرضوں سےمتعلق ازخودنوٹس پرسماعت ہوئی، سپریم کورٹ نے قرضے معاف کرانے والی دو سو بائیس کمپنیوں سےایک ہفتےمیں تفصیلی جواب طلب کرلیا۔دوران سماعت چیف جسٹس نے ریمارکس دیے قوم کے پیسے واپس نہ کیے تو معاملہ نیب کے حوالے کردیں گے اور نادہندگان کی جائیدادیں بھی ضبط کرلی جائیں گی۔ چیف جسٹس نے کہا کہ قوم کے چوون ارب کھانے کے باوجود تاحال کمپنیاں کام کررہی ہیں، پیسے بھی ہضم، لینڈ کروزر اور کاروبار بھی چل رہےہیں۔فریقوں کے وکلا نے سماعت ملتوی کرنے کی استدعا کی تو چیف جسٹس نے کہا اس اہم کیس کوملتوی نہیں کرسکتا، روزانہ کی بنیاد پر سماعت ہوگی۔وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ ایس ای سی پی کے ذریعے کمپنیوں کو نوٹسز دیے جائیں، جس پر چیف جسٹس نے کہا پبلک نوٹس کردیا کوئی نہیں آتا تو اپنے رسک پر مت آئے، جو کمپنیاں نہیں آئیں گی، ان کےخلاف یکطرفہ کارروائی ہوگی۔عدالت نے فریقوں سے انیس جون تک جواب طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔

پانی کی قلت کے کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہاکہ: پانی کے مسئلے کا زمہ دار کون ہے - پانی کا مسئلہ قوم کے لیے عذاب بن جائیگا آصف زرداری اور نواز شریف آکر بتائیں کہ انہوں نے پانی کے لیے کیا اقدامات کیے ہیں -''انہوں نے مزید کہا کہ :"گریڈ بائیس کے افسر کو پانی کا بالٹی لے کر نہانا پڑتا ہے -اسلام آباد میں پانی کا ٹینکر پندرہ سو روپے میں فروخت ہو رہا ہے -سی ڈی اے اپنی ناکامی کبھی تسلیم نہیں کرتا -سیمنٹ اور ٹینکر معافیہ نے اربوں روپے کی کرپشن کی ہے-کیا آخری دو حکومتوں نے پانے کے منصوبوں پر کام کیا ہے - "ان کا کہنا تھا کہ :"شہباز شریف نے خود تسلیم کیا ہے کہ پانی پر کام ہوا لیکن چار ارب روپے خرچ کرنے کے بعد بھی عوام کو پانی نہ ملا -ووٹ کی عزت یہ ہے کہ عوام ک بنیای حقوق دیں -ووٹ کی عزت یہ ہے کہ عوام کو صاف پانی اور صاف ماحول دیا جائے -"انہوں نے کہا کہ :" پانی کے مسئلے پر اتفاق کرنا ہو گا - پانی کے مسئلے کے لیے کانفرنس کروائیں گے اس سلسلے میں سمینار بھی منعقد کیا جائے گا -"

متعلقہ خبریں