مصر میں خاتون سیاح کو مصری عوام، مذہب کی توہین اور حیا سوز ویڈیو بنانے کے الزامات میں آٹھ سال قید کی سزا

مصر میں خاتون سیاح کو مصری عوام، مذہب کی توہین اور حیا سوز ویڈیو بنانے کے الزامات میں آٹھ سال قید کی سزا

مصر میں خاتون سیاح کو مصری عوام، مذہب کی توہین اور حیا سوز ویڈیو بنانے کے ... 08 جولائی 2018 (10:18) 10:18 AM, July 08, 2018

مصر کی ایک مقامی عدالت نے زیرحراست ایک مصری خاتون سیاح کو مصری عوام، مذہب کی توہین اور حیا سوز ویڈیو بنانے کے الزامات میں آٹھ سال قید کی سزا سنائی ہے۔

ذرائع کے مطابق نیو مصر کے علاقے جنح کی ایک مقامی عدالت نے لبنانی خاتون سیاح منیٰ مذبوح کو حیا سوز ویڈیو بنانے، اُنہیں سوشل میڈیا پر شیئرکرنے، مصری عوام اور مذہب کی توہین کرنے کے الزام میں 11 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی تاہم بعد ازاں سزامیں تخفیف کرتے ہوئے اسے آٹھ سال کردیا گیا۔ مصر کی کسی عدالت کی طرف سے یہ اپنی نوعیت کی انوکھی سزا ہے۔ عدالت نے خود ہی پہلے گیارہ سال قید کی سزا سنائی اور صرف ایک گھنٹے کے بعد سزا میں کمی کرتے ہوئے اسے آٹھ سال کردیا۔دوسری جانب مصری پراسیکیوشن کے حکام کا کہنا ہے کہ سزا پانے والی لبنانی خاتون کے وکیل اپنی موکلہ کو سنائی گئی سزا 29 جولائی تک اپیل عدالت میں چیلنج کرنے کا اعلان کیا ہے۔

متعلقہ خبریں