وزن کم کرنے کے خوائشمند افراد کیلئے نئی تحقیق منظر عام پر

وزن کم کرنے کے خوائشمند افراد کیلئے نئی تحقیق منظر عام پر

وزن کم کرنے کے خوائشمند افراد کیلئے نئی تحقیق منظر عام پر 07 جون 2018 (18:11) 6:11 PM, June 07, 2018

تحقیق کیمطابق یہ ضروری نہیں ہیکہ آپ کتنا کھاتے ہیں بلکہ یہ ضروری ہے آپ کیا کھاتے ہیں جو آپ کے وزن میں کمی کے سفر میں ایک اہم کردار ادا کرتا ہے. ایک مطالعہ کے مطابق، جو لوگ انتہائی پروسس شدہ غذائیں جیسا کہ چینی اورکسی ایک مخصوص غذا کے بجائے تازہ سبزیاں، پھل اور سارے اناجوں کو کھاتا ہے وہ ایک سال کی مدت میں وزن کم کر لیتا ہے۔ مطالعہ نے یہ بھی ظاہر کیا ہے کہ معیار کی خوراک کھانے کی اس حکمت عملی زیادہ تر ان لوگوں کے لئے کام کرتی ہے جو چربی اور کاربوہائیڈریٹ کم کرنے کیلئے ڈائٹنگ کرتے ہیں۔اسکے علاوہ ورزش بھی اہم ہے۔جو لوگ صاف اور صحت مند کھانے پر توجہ مرکوز کرتے ہیں اور مضر صحت اشیاء سے بچتے ہیں، جن میں سفید روٹی، سفد آٹا، سوڈا، کاربونیٹیڈ مشروبات اور ساکر نمک شامل ہیں، صحت مند زندگی گزارتے ہیں۔

اسٹینڈفورڈ یونیورسل میڈیکل اسکول میں سائنسدانوں کی طرف سے ایک سال کے لئے ایک کلینیکل ٹائٹل کے تحت یہ مطالعہ کیا گیا ۔ کل 509 افراد نے، 18 اور 50 سال کے درمیان اس میں حصہ لیا. وہ ذیابیطس کے شکار نہیں تھے اور جنکا جسمانی انڈکس28 اور 40کے درمیان تھا یہ مطالعہ ڈی این اے کے نمونےوں کا تجزیہ کرنے کے لئے کیا گیا تھا تاکہ وہ جینیاتی متغیرات کو جان سکیں جو جسم میں چربی اور کاربوہائیڈریٹ کے عمل کو متاثر کرتی ہیں.

یہ یاد رکھنا چاہئے کہ 18.5 سے 24.9 رینج میں جسم کے انڈیکس کو صحت مند سمجھا جاتا ہے.

لوگ دو گروپوں میں تقسیم ہوئے تھے. ایک گروہ کو کہا گیا تھا کہ کاربوہائیڈریٹ میں کم غذائیت کھانے کے لۓ اور دوسرے گروپ نے ایک غذا کھائی جو چربی میں کم تھی۔ دونوں گروہوں کو صحت مند کھانے پر توجہ مرکوز کرنے کے لئے کہا گیا تھا. کم موٹے گروپ کے لوگوں کو کھانے کی اشیاء کھانے سے محروم کیا گیا تھاجن میں فیٹس کم تھے.

یہ بتایا گیا تھا کہ ایک سال کے دوران، کم کاربو گروپ کے لوگ اوسط 5 سے 6 کم فیٹ گروپ کے اوسط 4 سے 5 کلو گرام و‌زن کم کرنے میں کامیاب ہو گئے تھے۔

متعلقہ خبریں