ایران میں حکام نے 2017ء میں ایرانی انقلاب کے بانی آیت اللہ خمینی کے مزار اور پارلیمان کی عمارت پر حملے میں ملوث آٹھ افراد کو پھانسی دے دی

ایران میں حکام نے 2017ء میں ایرانی انقلاب کے بانی آیت اللہ خمینی کے مزار اور پارلیمان کی عمارت پر حملے میں ملوث آٹھ افراد کو پھانسی دے دی

ایران میں حکام نے 2017ء میں ایرانی انقلاب کے بانی آیت اللہ خمینی کے مزار اور ... 07 جولائی 2018 (17:58) 5:58 PM, July 07, 2018

ایران میں حکام نے 2017ء میں ایرانی انقلاب کے بانی آیت اللہ خمینی کے مزار اور پارلیمان کی عمارت پر حملے میں ملوث آٹھ افراد کو پھانسی دے دی ہے۔

ان افراد کو پھانسی کی سزا ایران کی ایک عدالت نے سنائی تھی جس پر اطلاعات کے مطابق ہفتے کو عمل درآمد کردیا گیا ہے۔گزشتہ سال 7 جون کو کیے جانے والے اس حملے میں 18 افراد ہلاک اور 50 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔شیعہ اکثریتی ملک ایران میں حالیہ برسوں کے دوران سنی شدت پسندوں کی جانب سے کیا جانے والا یہ واحد حملہ تھا جس کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم داعش نے قبول کی تھی۔داعش نے کہا تھا کہ اس نے یہ حملہ عراق اور شام میں ایران کی فوجی مداخلت کے جواب میں کیا ہے۔اس حملے کے بعد ایرانی فوج 'پاسدارانِ انقلاب' نے شام میں داعش کے مبینہ ٹھکانوں پر میزائل حملے کیے تھے

متعلقہ خبریں