یہ سزائیں میری جدوجہد کا راستہ نہیں روک سکتیں اور میں اپنی جدوجہد جیل میں بھی جاری رکھوں گا، نوازشریف

یہ سزائیں میری جدوجہد کا راستہ نہیں روک سکتیں اور میں اپنی جدوجہد جیل میں بھی جاری رکھوں گا، نوازشریف

یہ سزائیں میری جدوجہد کا راستہ نہیں روک سکتیں اور میں اپنی جدوجہد جیل میں ... 07 جولائی 2018 (12:44) 12:44 PM, July 07, 2018

سابق وزیراعظم نوازشریف نےلندن فلیٹس ریفرنس میں سزا سنائے جانے کے بعد وطن واپس آنے کا اعلان کیا ہے. تاہم ,ان کا کہنا ہے کہ اہلیہ کے ہوش میں آتے ہی پاکستان آجاؤں گا.

نواز شریف نے کہا کہ ’’چند جرنیل اور ججز مل کر قوم پر غلامی مسلط کردیتے ہیں۔ لیکن، میں اس کے خلاف جدوجہد جاری رکھوں گا‘‘۔فیصلہ سنائے جانے کے بعد لندن میں مریم نواز کے ہمراہ نیوز کانفرنس میں نواز شریف کا کہنا تھا کہ ’’ یہ سزائیں میری جدوجہد کا راستہ نہیں روک سکتیں اور میں اپنی جدوجہد جیل میں بھی جاری رکھوں گا‘‘۔مسلم لیگ(ن) کے قائد کا کہنا تھا کہ ’’میرے خلاف ہر ہتھکنڈہ اپنایا گیا جس کی کوئی مثال نہیں ملتی۔ جس جدوجہد کا میں نے آغاز کیا اس میں اسی طرح کے فیصلے آتے ہیں اور سزائیں بھی ملتی ہیں، کوئی قید ہوتا ہے تو کوئی پھانسی پاتا ہے اور کوئی تاحیات نااہل قرار دیا جاتا ہے تو کسی کو وزارت عظمیٰ سے ہٹایا جاتا ہے۔ پاکستان میں سیاسی و مذہبی جماعتوں سے دھرنے دلوائے جاتے ہیں، وزیر اعظم کو زبردستی مستعفی ہونے کا کہا جاتا ہے، سیاسی پارٹیوں کی توڑ پھوڑ کے جرم کا ارتقاب ہوتا ہے، ارکان کی وفاداریاں بندوق کے زور پر تبدیل کرائی جاتی ہیں‘‘۔

متعلقہ خبریں