بھارت کی اعلیٰ ترین عدالت نے مردوں میں ہم جنس پرستی کو قانونی قرار دیدیا ہ

بھارت کی اعلیٰ ترین عدالت نے مردوں میں ہم جنس پرستی کو قانونی قرار دیدیا ہ

بھارت کی اعلیٰ ترین عدالت نے مردوں میں ہم جنس پرستی کو قانونی قرار دیدیا ہ 06 ستمبر 2018 (14:35) 2:35 PM, September 06, 2018

بھارت کی اعلیٰ ترین عدالت نے مردوں میں ہم جنس پرستی کو قانونی قرار دیدیا ہے۔بھارتی ذرائع کے مطابق ہم جنس پرستی سے متعلق سامراجی دور کے قانون ’’انڈین پینل کوڈ سیکشن 377‘‘ کو 2013ء میں دوبارہ لاگو کر دیا تھا جس کے تحت مردوں میں ہم جنس پرستی (گے سیکیس) قانونی طور پر جرم تھا تاہم بھارتی سپریم کورٹ نے جمعرات کو اپنے فیصلے میں ہم جنس پرستی کو قدرتی عمل قرار دیتے ہوئے اس پر سے پابندی ہٹا دی ہے ۔ بھارت میں ہم جنس پرستی کو شجر ممنوعہ سمجھا جاتا ہے اور بعض ارکان پارلیمنٹ کی مخالفت کے باجود بھارتی سپریم کورٹ نے ہم جنس پرستی پر پابندی کو ختم کرنے کا حکم دیا ہے۔

متعلقہ خبریں