تہلکہ تو مچ گیا ہے اور میں نے نہیں مچایا یہ تحریک انصاف نے مچایا ہے -اچھے عمل کرتے تو ان کو ڈرنے کی ضرورت تو نہ ہوتی ریحام خان کا اپنی کتاب پر تحریک انصاف کے رد عمل پر بیان

تہلکہ تو مچ گیا ہے اور میں نے نہیں مچایا یہ تحریک انصاف نے مچایا ہے -اچھے عمل کرتے تو ان کو ڈرنے کی ضرورت تو نہ ہوتی ریحام خان کا اپنی کتاب پر تحریک انصاف کے رد عمل پر بیان

تہلکہ تو مچ گیا ہے اور میں نے نہیں مچایا یہ تحریک انصاف نے مچایا ہے -اچھے عمل ... 06 جون 2018 (16:56) 4:56 PM, June 06, 2018

ریحام خان کا اپنی کتاب پر تحریک انصاف کے رد عمل کے بارے میں کہنا ہے کہ :"اگر وہ اچھے عمل کرتے تو ان کو ڈرنے کی ضرورت تو نہ ہوتی نا -تو مخلوق کو چاہیے تھا کہ وہ اپنے اعمال اور اپنی حرکتیں ٹھیک کر لیتے تو وہ آج نہ خوفزدہ ہوتے -تہلکہ تو مچ گیا ہے اور میں نے نہیں مچایا یہ تحریک انصاف نے مچایا ہے تو مجھے سمجھ نہیں آرہی اس لاجک کی کتاب سے آپ ڈر رہے ہیں اسے پبلسٹی آپ دے رہے ہیں میں بہت خوش ہوں اور مجھے ان کا شکریہ بھی اداکرنا چاہیے لیکن میرا خیال ہے کہ میں ابھی اس کے لیے جواب دہ نہیں ہوں ابھی تک کتاب منظر عام پر نہیں اور شائع نہیں ہوئی جب یہ منظر عام پر آجائے تو اس کے بعد یہ بات کرنی چاہیے ۔

ا سے قبل پاکستان تحریک انصاف نے الیکشن کمیشن سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ عمران خان کی سابقہ بیوی ریحام خان کی کتاب پر فوری پابندی لگائے۔ ریحام خان 24 گھنٹے کے اندر اس کتاب کے متن کی تردید کریں بصورت دیگر اس کتاب میں کی جانے والی باتیں قانونی کارروائی کی متقاضی ہیں جو سول نہیں بلکہ کریمنل ہوگی، ان کیخلاف پرچے درج کرائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے ترجمان فواد چوہدری نے ریحام خان کی کتاب کے سلسلے میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس قسم کی کتاب انتخابات سے قبل دھاندلی میں شمار ہوتی ہے۔اسلام کی رو سے منکوحہ مردوعورت ایک دوسرے کا لباس ہیں لیکن ریحام نے ہمارے فیملی سسٹم کا حشر نشر کردیا ہے ، انہیں پاکستان کی پروا ہے نہ خاندانی اقدار کی۔

فواد چوہدری نے ریحام خان سے مطالبہ کیا کہ وہ چوبیس گھنٹوں میں اس ایشو کی تردید کردیں بہ صورت دیگر جو کچھ کتاب میں لکھا گیا ہے وہ شدید ترین قانونی کارروائی کا متقاضی ہے، اس پر پرچا نہیں کرمنل کیسز ہونے ہیں، الیکشن کمیشن کو فوری اس کتاب کو بین کرنا چاہیے۔

تحریک انصاف کے ترجمان نے سوال اٹھایا کہ یہ کتاب الیکشن سے 60 دن پہلے کیوں آرہی ہے، ریحام خان کیا چاہتی ہیں، تین دن سے سوشل میڈیا پر تماشا چل رہا ہے، ٹی وی پر 2 سے 3 شوز بھی ہو گئے، جب کہ چیئرمین پیمرا سو رہے ہیں۔

انھوں نے کہا تحریک انصاف کا یہ مسئلہ ہے کہ عمران خان کا کتا شیرو بھی سوشل میڈیا پر مشہور ہے، ریحام خان نے بھی مشہور ہونا تھا، ان کی کتاب پاکستانی خاندانی اقدار کے خلاف ہے، ریحام کو جس طرح کتاب کی تردید کرنی چاہیے تھی بدقسمتی سے نہیں کی۔

فواد چوہدری نے اشارہ دیتے ہوئے کہا کہ ریحام خان کی کتاب کے پیچھے حسین حقانی کا ہاتھ ہے، لندن میں ریحام ، حسین حقانی اور ان کے بیٹے کی تصویر بھی بنائی گئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ حسین حقانی وہ شخص ہیں جنھوں نے 1987 میں بے نظیربھٹو اور نصرت بھٹوکی جعلی تصاویر بنوائیں، نصرت بھٹو کی رقص کی تصویریں ہیلی کاپٹر سے پورے پنجاب میں گرائی گئیں۔ انہوں نے کہا کہ ریحام نے خود تسلیم کیا کہ جوان بیٹے بیٹی کو بٹھا کر یہ کتاب ایڈٹ کرائی، اندازہ ہوتا ہے کہ کتنی پست ذہنیت کی خاتون ہیں۔ عمران خان کے چاہنے والوں کو اس بکواس سے ذرہ برابرفرق نہیں پڑتا ہے۔ جانتے ہیں پہلے ماڈل ٹاؤن اور اب رائے ونڈ مافیا کیسے آپریٹ کرتا ہے۔

تحریک انصاف کے ترجمان نے ریحام خان کے اخراجات کے حوالے سے سوال اٹھایا کہ وہ لندن، استنبول یا فائیو اسٹار آئی لینڈ جاتی ہیں، ان کے پاس پیسے کہاں سے آرہے ہیں۔ پاناما فیصلے کے تین دن بعد پریس کانفرنس کرنے والے حنیف عباسی کے ساتھ ریحام خان کی تصویریں سب کے سامنے ہیں، انھوں نے کہا تھا ریحام خان کی کتاب الیکشن سے پہلے آگئی تو پھر کیا ہوگا۔

فوادچوہدری نے ن لیگ کو نشانے پر رکھتے ہوئے کہا کہ حینف عباسی کیساتھ ریحام کی تصویریں سب کے سامنے ہیں۔ احسن اقبال نے ای میل میں مریم اور ریحام کی ملاقات کا انتظام کیا تھا، اس ای میل کی مکمل تحقیقات ہونی چاہیئے۔ عابد شیرعلی نے بھی اس حوالے سے ٹویٹ کی تھی۔ تینوں کے پاس کتاب کا متن کیاں سے آیا تھا صاف ظاہر ہے یہ رائے ونڈ نیٹ ورک ہے جسے حسین حقانی نے سپورٹ کیا۔ ایف آئی اے سائبرونگ کو مکمل تحقیقات کرنی چاہیئے کہ یہ ای امیل کیا ہے کہاں سے آئی، متن کیسے پھیلا یا گیا اور اب تک ریحام نے تردید کیوں نہیں کی۔

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ جلسوں میں شرکت کرنے والی خواتین کے بعد اب اعلیٰ قیادت کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ ریحام خان سے پھر مطالبہ کرتا ہوں کہ فوری معافی مانگیں ورنہ قانونی کارروائی کیلئے تیار رہیں۔

فواد چوہدری نے کہا کہ ریحام خان کی لالچ کی وجہ سے معاملات خلع تک پہنچے تھے، اس نے بہت سے لوگوں سے پیسے مانگے، ریحام خان نے خود کہا میرے بیٹے اور بیٹی نے یہ کتاب ایڈٹ کی ہے، کوئی خاتون اپنے بچوں سے ایسی شرم ناک کتاب کیسے ایڈٹ کراسکتی ہے۔

فواد چوہدری نے یہ سوال بھی اٹھایا کہ کتاب الیکشن سے 60 دنوں پہلے کیوں آرہی ہے؟

متعلقہ خبریں