عمران خان کا کہنا ہے کہ میری کردار کشی کے نتیجے میں مجھے کوئی نقصان پہنچنا ہوتا تو وہ 1996 میں ہی ہو جاتا آج تک ریحام خان پر ۔۔۔۔۔پڑھئے اہم حقائق

عمران خان کا کہنا ہے کہ میری کردار کشی کے نتیجے میں مجھے کوئی نقصان پہنچنا ہوتا تو وہ 1996 میں ہی ہو جاتا آج تک ریحام خان پر ۔۔۔۔۔پڑھئے اہم حقائق

عمران خان کا کہنا ہے کہ میری کردار کشی کے نتیجے میں مجھے کوئی نقصان ... 05 جون 2018 (20:55) 8:55 PM, June 05, 2018

پی ٹی آئی کے رہنما اعجاز چودھری کا ریحام خان کی کتاب کے بارے میں کہنا ہے کہ :"میں نے خود بھی اس بات پر ساری زندگی عمل کیا اور باقی ماندہ ہے اس میں بھی کوشش کریں گے کہ لوگوں کے گھریلو معاملات پر گفتگو نہ کریں اور جو چار دیواری ہے مشرقی معاشرہ بالخصوص تقاضا کرتا ہے کہ چاردیواری کے تقدس کو پامال نہیں ہونا چاہیے اب جو بحث جاری ہے یہ خود محرمہ کی لگائی ہوئی ہے -میں نے تو کتاب نہیں دیکھی جو میڈیا پر چل رہا ہے اس کے بارے میں میں نہیں کہہ سکتا جو میڈیا پر چل رہا ہے اگر یہ سچ ہے تو بہت ہی شرمناک ہے جو میں جانتا ہوں میں پھر کہہ رہا ہوں جو میں جانتا ہوں اس کے مطابق ن لیگ اور ان کے بہت قریبی سینیئر صحافی اس کے اندر موجود ہیں گزشتہ ڈیڑھ دو سال سے اور ایک رہنما تو ریکارڈ پر ہیں ن لیگ کے جنہوں نے گزشتہ سال کہا تھا کہ ریحام خان ایک کتاب لکھیں گی جو الیکشن کے قریب آجائےگی -میں اس مقام پریہ تو عرض نہیں کر سکتا میں اس وقت جماعت اسلامی میں تھا کہ یہ عمران خان صاحب پر 1996 میں بہت بڑے بڑے الزامات لگائے گے تھے اور وہ بھی اس کی ذاتی زندگی پر ہی لگائے گئے تھے -

عمران خان کا کہنا ہے کہ میری کردار کشی کے نتیجے میں مجھے کوئی نقصان پہنچنا ہوتا تو وہ 1996 میں ہی ہو جاتا آج تک ریحام خان پر انہوں نے کبھی کوئی تبصرہ نہیں کیا ریحام خان کے لگائے گئے الزامات کا انہوں نے کبھی جواب نہیں دیا -میں سمجھتا ہوں کہ ریحام خان صاحبہ باقی لوگوں کی ذاتی زندگی کو اچھالنے کے بجائے کتاب کے اس حصے کو علیحدہ کر دیں تو یہ پاکستان کے معاشرے کے لیے بہتر ہو گااور کسی کا منہ نہیں بند کیا جاسکتا جب لوگ یہ پہلو دیکھیں گے تو اور بھی بہت سے پہلو دیکھیں گے -"

متعلقہ خبریں