وہ کڑوڑ پتی کینسر کا مریض مسلمان نوجوان جس نے اپنا سب کچھ اللہ کی راہ میں خرچ کر دیا۔پڑھئے امت مسلمہ کے فخر علی کی کہانی

وہ کڑوڑ پتی کینسر کا مریض مسلمان نوجوان جس نے اپنا سب کچھ اللہ کی راہ میں خرچ کر دیا۔پڑھئے امت مسلمہ کے فخر علی کی کہانی

وہ کڑوڑ پتی کینسر کا مریض مسلمان نوجوان جس نے اپنا سب کچھ اللہ کی راہ میں خرچ ... 04 جون 2018 (22:58) 10:58 PM, June 04, 2018

علی ایک نوجوان مُسلمان ہے جو آسٹریلیا میں پیدا ہوا اور یہاں پر ہی بڑا ہوا .جس نے ایک کامیاب زندگی گُزاری .تاہم اس کی زندگی میں کُچھ عرصہ پہلے ایک بُہت بڑی تبدیلی آئی .اُس کا کہنا ہے کہ میری زندگی کے اس حصہ میں اللہ کا مُجھ پر انعام کیا ہے اور وہ تحفہ میرے جسم میں کینسر کا ہو جانا ہے اور وجہ سے میں نے اپنی زندگی لوگوں کی مدد کیلئے تبدیل کر لی . الحمداللہ یہ ایک تحفہ ہے کیونکہ اس کے ذریعے اللہ نےمُجھے تبدیل ہونے کا موقعہ دیا ہے .اس بیماری نے مُجھ پر ہر چیز کا راز کھولا ,حتیٰ کہ چھوٹے سے چھوٹا تحفہ ,جیسے کہ سانس لینے کیلئے تازہ ہوا .اُس کا کہنا ہے کہ جب مجھے پتہ چلا کہ 4 ماہ سے ُمجھے کینسر ہے اور زیادہ سے زیادہ سات مہینے زندہ رہے سکتا ہوں تو می نے اپنا سارا کاروبار بیچ دیا .میں نے اپنی گاڑیوں اور مہنگی ترین گھڑیوں سے چُھٹکارہ پا لیا حتیٰ کہ اُن کپڑوں سے جنھیں میں بیرونِ مُلک اپنے ساتھ رکھتا تھااور تمام چیزیں لوگوں کو دے دیں .میں بغیر کسی چیز کے اس دُنیا کو چھوڑنا چاہتی ہوں .

اُس قُربانی کو جان جو وہ دینے جا رہا تھا .اُس کی ایک گھڑی 60 ہزد ڈالرز کی تھی . علی نے بتایا کہ اُس کے پاس بے شُمار جوتوں کے جوڑے تھے جن میں سب سے کم قیمت کا جوڑا 1300 ڈالرز کا تھا اور اُس کے عام ربڑ والے چپل 700 ڈالر کے تھے .اُس کے پاس بے تحاشہ مہنگی سن گلاسز تھی ان کو جمع کرنا اُس کا شوق تھا وہ تمام اُس نے افریقہ کے مسلمان بھائیوں میں تقسیم کر دی .اس کے پاس فراری گاڑی 600,000 ڈالرز کی ہے .جب اس سے سوال کیا گیا کہ اس گاڑی و دیکھ کر کیسا محسوس کرتے ہو ,تو اُس نے جواب دیا کہ مجھے اسے چلانا بلکُل بھی اچھا نہیں لگتا .جبکہ یہ گاڑی ہماری سب سے بڑی خواہش ہوتی ہے اور ہم اپنی زندگی اسی کے حصول کیلئے گُزار دیتے ہیں.جو لوگ اس گاڑی کو خریدنے کیلئے شدید محنت کرتے ہیں اور اُن کی خواہش اس گاڑی کو خریدنا ہے تو میرا اُن سے کہنا ہے کہ آپ لوگ بلکل غلط ہدف کیطرف جا رہے ہیں.جب آپ کو بتایا جائیگا کہ آپ کی زندگی کے بُہت کم دن رہیں گئے ہیں تو تب آپ کو احساس ہو گا کہ آپ کو یہ تمام چیزیں بلکُل بھی فائدہ نہیں دیں گی . میرے نزدیک اس گاڑی کی حیثیت افریقی بچوں کے جوتی کے جوڑوں سے زیادہ نہیں.کسی افریقی بچے ک چہرے پر مُسکراہٹ اس مہنگی ترین گاڑی سے زیادہ قیمتی ہے.میں نے افریقی مسلمانوں کیلئے ایک فنڈ کمیٹی بھی بنائی ہے . یہ تبدیلی میری زندگی میں تب آئی تھی جب ایک افریقی مسلمان کینسر سے مر گیا تھا تب میں نے سوچا کہ جب تُم چلے جاؤ گئے تو تمہارے لئے کیا ہو گا .کوئی بھی تمھارے عزیز رشتہ دار,پیسہ ساتھ نہیں ہو گا حشر میں صرف خیرات کیا ہوا پیسہ ہی کام آئیگا .اللہ کے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی حدیث مُبارکہ ہے کہ" جو شخص اللہ سے ملنے کو پسند کرتا ہے اللہ بھی اُس سے ملنے کو پسند کرتا ہے اور جو شخص اللہ سے ملنے کو ناپسد کرتا ہے اللہ بھی اس سے ملنے کو ناپسند کرتا ہے. کینسر کی وجہ سے میرے دوست نے مُجھے ڈرگز لینے کا مشوہ دیاتھا کہ اس سے درد ختم ہو جائیگا لیکن تمام پاکی اللہ کیلئے ہے میں نے ایسا نہیں کیا .میں نے دو چیزیں دیکھیں جو اس سے پہلے میں نے کبھی نہیں دیکھی تھیں جب میرے گھر والے میرے ساتھ تھے اور میں کہہ رہا تھا کہ اے اللہ مجھے اپنے پاس بُلا لے وہ بُہت خوبصورت تھا جسے میں دیکھ رہا تھا اور میں اُس کے پاس جانا چاہتا تھا اگلے دن جب میں اُٹھا تو میں پریشان یو گیا کہ اللہ مجھے اپنے پاس نہیں لے گیا .