حضرت سلیمان علیہ الاسلام نے اللّٰہ تعالیٰ سے دعا کی تھی کہ مجھے ایسی حکومت ملے کہ میرے آنے والے کے بعد کسی کو ایسی نصیب نہ ہو -ان کی دعا قبول ہوئی اللّٰہ تعالیٰ نے انہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔پڑھئے ایمان افروز واقعہ

حضرت سلیمان علیہ الاسلام نے اللّٰہ تعالیٰ سے دعا کی تھی کہ مجھے ایسی حکومت ملے کہ میرے آنے والے کے بعد کسی کو ایسی نصیب نہ ہو -ان کی دعا قبول ہوئی اللّٰہ تعالیٰ نے انہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔پڑھئے ایمان افروز واقعہ

حضرت سلیمان علیہ الاسلام نے اللّٰہ تعالیٰ سے دعا کی تھی کہ مجھے ایسی حکومت ... 04 جولائی 2018 (18:36) 6:36 PM, July 04, 2018

حضرت سلیمان علیہ الاسلام نے اللّٰہ تعالیٰ سے دعا کی تھی کہ مجھے ایسی حکومت ملے کہ میرے آنے والے کے بعد کسی کو ایسی نصیب نہ ہو -ان کی دعا قبول ہوئی اللّٰہ تعالیٰ نے انہیں انسانوں جنوں پانی اور ہوا پر حکومت عطاکی - حضرت سلیمان علیہ الالسام نے اپنے باپ حضرت داؤد علیہ الاسلام کی خواہش کے مطابق فلسطین میں ایک عبادت خانہ تعمیر کیا اس عبادت خانے کا نام ہیکل سلیمانی تھا ہیکل سلیمانی کی تعمیر 1012 قبل مسیح میں ہوئی -

یہ بھی پڑھیں:ایک بادشاہ عالیشان لشکر کے ساتھ جا رہا تھا حضرت عزرائیل انسانی شکل میں آ گئے .دنیا کی حقیقت پر بہترین واقعہ

یہ بھی پڑھیں:مال، محبت اور کامیابی،ایک عورت کسی کام سے گھر سے باہر نکلی تو گھر کے باہر تین اجنبی بزرگوں کو بیٹھے دیکھا ۔۔۔۔۔نہایت سبق آموز واقعہ پڑھئے

اس کی تعمیر کا کام دو سال تک جاری رہا - بعض روایات کے مطابق دو لاکھ مزدوروں نے اس تعمیر میں حصہ لیا تھا -اس تعمیر میں جن بھی شامل تھے - اس عبادت خانہ کی لمبائی نوے فٹ ,چوڑائی تیس فٹ اور لمبائی پینتالیس فٹ تھی -

یہ بھی پڑھیں:بنی اسرائیل میں ایک عورت تھی جو بہت بدکردار تھی،قریب کسی اور بستی کا نوجوان تھا جونیک تھا، عبادت گزارتھا، حضرت موسیٰؑ کو جو دیکھا تو وہ اس وقت بنی اسرائیل کے لوگوں کو نصیحت فرما رہے تھے۔پڑھئے اللہ پاک کی رحمت و بخشش کا ایمان افروز واقعہ

یہ بھی پڑھیں:رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی ناموس کی توھین کرنے والے عیسائی مبلغ کا کتے نے کیا حال کیا-اور اس واقعے کو دیکھ کر کتنے لوگ مسلمان ھوئے-پڑھئے ایمان افروز واقعہ

اس کے اندر تابوت سکینہ رکھنے کے لیے ایک خاص جگہ بنائی گئی تھی -تابوت سکینہ ایک صندوق کی شکل میں تھا جس کے اندر یہودیوں کے تبرکات رکھے گئے تھے اس میں آل موسیٰ اور آل ہارون علیہ الاسلام کی نشانیاں تھیں عصائے موسیٰ علیہ الاسلام اور وہ تختیاں جو اللّٰہ تعالیٰ نے حضرت موسیٰ علیہ الاسلام کو طور سینا پر دی تھیں -اس لیے یہ صندوق ان کے لیے بہت متبرک تھا -طالوت جب بنی اسرائیل کا بادشاہ بنا تو اس نے لڑ کر یہ صندوق حاصل کر لیا -اس صندوق کے لیےفلسطین پر بہت سے حملے ہوئے ہیں -کبھی بابل (عراق ) نے وہاں پر تباہی مچائی تو کبھی رومیوں نے حملہ کیا جس نے بھی حملہ کیا اسی نے حضرت سلیمان علیہ السلام کے ہیکل سلیمانی کو بھی نشانہ بنایا ایک بار بابل ( عراق ) کے بادشاہ بخت نصر نے فلسطین پر حملہ کیا اور ہیکل سلیمانی کو تاخت و تاراج کیا اور اسرائیلیوں کا قتل عام کیا بخت نصر دس لاکھ اسرائیلیوں کو عراق لے گیا اور وہاں انہیں اپنا غلام بنا لیا بخت نصر کے عہد کے بعد پھر یہ قوم فلسطین میں آ کر آ باد ہو گئی -رومی بھی اکثر فلسطین پر حملہ کرتے رہتے تھے اور ان حملوں کی وجہ سے ہیکل سلیمانی کے نشان مٹتے رہے اور آخر میں روم کے بادشاہ ٹے ٹس نے ہیکل سلیمانی کو آگ لگا کر اس کو بالکل تباہ کر دیا اور اس کے وجود کی جو دھندلی سی جھلک تھی وہ بھی مٹ گئی- یہودیوں کا دعویٰ ہے کہ ہیکل سلیمانی کی زمین پر مسجد اقصیٰ تعمیر کی گئی ہے اس لیے اس پر ان کا حق زیادہ ہے آج بھی یہ تنازعہ ایک مسئلہ بنا ہوا ہے جس وجہ سے بیت المقدس کی زمین پر آج تک جنگ جاری ہے اور یہودی مسجد اقصیٰ کو شہید کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں -

یہ بھی پڑھیں:شرابیوں کی محفل میں حضرت جنید بغدادی کی دو دکعت نماز نے کیسے سب کی زندگی بدل ڈالی۔پڑھئے ایمان افروز واقعہ

ضرور پڑھیں:ایک مرتبہ سلیمان علیہ السلام اپنے لشکر کے ساتھ ہوا میں اڑتے ہوئے جا رہے تھے نیچے گہرا سمندر تھا سمندر میں خطرناک موجیں اٹھ رہی تھیں حضرت سلیمان علیہ السلام نے ہواکو رکنے کا حکم دیا تو ہوا پھیل گئی پھر جنات کو سمندر میں غوطہ لگا کر اندر کے حالات معلوم کرنے کو کہا

متعلقہ خبریں