داعش کے سربراہ ابو بکر البغدادی کا بیٹا شام میں مارا گیا

داعش کے سربراہ ابو بکر البغدادی کا بیٹا شام میں مارا گیا

داعش کے سربراہ ابو بکر البغدادی کا بیٹا شام میں مارا گیا 04 جولائی 2018 (17:58) 5:58 PM, July 04, 2018

ابو بکر البغدادی کا ایک بیٹا شام کے شہر حمص میں بشار الاسد اور روس کی فوج کے ساتھ لڑائی میں مارا گیا ہے۔

ضرور پڑھیں:امریکہ میں بچے کی سالگرہ اس وقت خراب ہوگئی جب ایک شخص ہاتھ میں چاقو لئیے کیک کی بجائے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ایسی بیانک سالگرہ کہ پولیس کو مداخلت کرنی پڑی۔

ضرور پڑھیں:ایک ڈرائیور ڈرائیونگ کے دوران ویڈیو بنا رہا تھا کہ اچانک شدید حادثہ ہو گیا،لیکن اسکے بعد جو کچھ ہوا دنیا اس پر حیران ہو گئی۔

’ناشرنیوز‘ کے مطابق البغدادی کا بیٹا خذیفہ البدری حال ہی میں حمص شہر میں تھرمل اسٹیشن کے قریب ایک کارروائی کے دوران ہلاک ہوا۔قبل ازیں حمص میں ھجین کے مقام پر عراقی فوج نے بھی ’داعش‘ کے ٹھکانوں پر بمباری کی تھی جس کے نتیجے میں تنظیم کے پیغام رساں سمیت متعدد اہم کمانڈر ہلاک اور زخمی ہوگئے تھے۔عراقی فوج کے آپریشن کنٹرول روم کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ شام میں داعش کے خلاف فوجی کارروائی وزیراعظم حیدر العبادی کے حکم پر انٹیلی جنس معلومات کی روشنی میں کی گئی۔ کارروائی کے لیے’ایف 16‘ جنگی طیاروں کا استعمال کیا گیا جس کے نتیجے میں داعش کے متعدد جنگجو ہلاک اور زخمی ہوگئے تھے۔

ضرور پڑھیں:فٹ بال عالمی کپ کے دورا ن ایک اور خاتون اینکر ہراسگی کا شکار

ضرور پڑھیں:اسے کہتے ہیں انصاف ایسے ہوتی ہے ترقی،متحدہ عرب امارات میں منی لانڈرنگ کیخلاف بڑا اقدام اٹھا لیا گیا

متعلقہ خبریں